شہ سرخیاں
Home / پاکستان / بھٹو ریفرنس کیس، ‌بابر‌اعوان‌ کو‌شاعرانہ ‌اندا‌زمہنگا ‌پڑگیا، سپریم کورٹ نےلائسنس کا ریکارڈ طلب

بھٹو ریفرنس کیس، ‌بابر‌اعوان‌ کو‌شاعرانہ ‌اندا‌زمہنگا ‌پڑگیا، سپریم کورٹ نےلائسنس کا ریکارڈ طلب

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے توہین عدالت کے شوکازنوٹس پر بابر اعوان کی گذشتہ روز میڈیا سے گفتگو کا نوٹس لیتے ہوئے اُن کی سرزنش کی ہے اور انہیں اظہار وجوہ کا دوسرا نوٹس بھجوا دیا گیا ہے ۔ سپریم کورٹ میں بھٹو ریفرنس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کا بابر اعوان سے کہنا تھا کہ آپ کتنے عرصے سے اس شعبے میں ہیں، آپ کو لائسنس کب ملا تھا، فائل لے کر آئیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ہمارا دیا گیا لائسنس اور ہماری ہی بے عزتی۔ عدالت کے حکم پر سیکرٹری اطلاعات سے بابر اعوان کی ویڈیو اور اخبارات کے تراشے منگوائے گئے اور عدالت میں ویڈیو بھی دکھائی گئی جس کے بعد چیف جسٹس نے بابر اعوان سے استفسار کیا کہ کل سے یہ سب کچھ چل رہا ہے، یہ کیا ہے؟ جب تک عدلیہ کی عزت نہیں ہو گی کام نہیں چلے گا۔ بابر اعوان کا اس پر کہنا تھا کہ صرف شعرکا ایک حصہ نہ دیکھا جائے اور اُنہیں سنے بغیر فیصلہ نہ سنایا جائے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ ایک انگریزی اخبارنےکیالکھاہے، کیا آپ نے پڑھا ہے جس پر بابراعوان نے کہاکہ ایک انگریزی اخبار کے علاوہ دیگر اخبار بھی پڑھے جاسکتے ہیں جس پر عدالت کاکہناتھاکہ ریکارڈ دیکھے بغیر اور اُنہیں سننے کے بغیر کوئی فیصلہ نہیں دیاجائے گا۔ جسٹس جواد ایس خواجہ کا کہنا تھا کہ 36 سال سے اس شعبے میں ہیں مگر کیا یہ عزت ملی ہے؟ ہم تو انصاف کے داعی ہیں، وکلاءسے بھی اچھی دوستی ہے، ہم پر تنقید کریں توہین نہیں۔ صدرسپریم کورٹ بارایسوسی ایشن یاسین آزاد نے بابرا عوان کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کوئی درمیانی راستہ نکالنے کی کوشش کی جائے۔ سینٹ میں قائد ایوان نئیر بخاری اور نذر محمد گوندل بھی سپریم کورٹ پہنچ گئے۔ بعد ازاں 11 رکنی بینچ نے توہین عدالت کا فیصلہ لکھواتے ہوئے کہا کہ بابرا عوان کا رویہ اور عمل درست نہیں، بار اوربینچ کا رشتہ باہمی احترام پر ہوتا ہے،عدالتی کارروائی کی تضحیک کا کسی کو اختیار نہیں دیاجاسکتا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ عزت افتخار چوہدری کی نہیں سپریم کورٹ کی ہونی چاہئے۔ عدالت نے بابر اعوان کو نو جنوری تک نوٹس پر جواب داخل کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی. واضح رہے کہ اَس سے قبل بھھی یکم سمبر کی پریس کانفرنس پر سپریم کورٹ نے 13جنوری تک جواب داخل

x

Check Also

لاہور:اسپتال میں جگہ نہ ملنے پررکشے میں بچے کا جنم

لاہور(مانیٹرنگ سیل) پنجاب میں ایک اور ماں نے اسپتال کے باہر رکشے ...

Connect!