شہ سرخیاں
Home / پاکستان / دہشت گردوں کے علاج میں سہولت کاری کیس:ڈاکٹر عاصم اور دیگر پر فرد جرم عائد
loading...
دہشت گردوں کے علاج میں سہولت کاری کیس:ڈاکٹر عاصم اور دیگر پر فرد جرم عائد

دہشت گردوں کے علاج میں سہولت کاری کیس:ڈاکٹر عاصم اور دیگر پر فرد جرم عائد

کراچی (مانیٹرنگ سیل) کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت نے دہشت گردوں کے علاج معالجے میں مبینہ سہولت کاری کیس میں ڈاکٹر عاصم اور دیگر پر فرد جرم عائد کردی۔ ملزمان کے جرم سے انکار پر عدالت نے گواہ طلب کرلیئے۔ کیس میں وسیم اختر اور قادر پٹیل کی درخواست ضمانت پر فیصلہ بھی محفوظ کرلیا گیا۔ انسداد دہشت گردی عدالت کراچی میں دہشت گردوں کے علاج معالجے میں سہولت فراہم کرنے کے الزام کے تحت درج مقدمے کی سماعت ہوئی۔ کیس میں نامزد ملزمان ڈاکٹرعاصم، عبدالقادر پٹیل، انیس قائم خانی، رؤف صدیقی، وسیم اختر اور عثمان معظم عدالت میں پیش ہوئے۔ دوران سماعت صحت جرم پڑھ کر سنائی گئی جس پر تمام ملزمان نے اس سے انکار کردیا۔ ڈاکٹرعاصم نے کہا کہ انہوں نے کوئی جرم نہیں کیا۔ ان پر جھوٹے، من گھڑت اور بے بنیاد الزامات لگائے گئے۔ان کا کہنا تھا کہ جن کی آنکھوں پر پٹی بندھی ہے ان کے لئے دعا ہی کی جاسکتی ہے۔ ملزمان کی جانب سے صحت جرم سے انکار پر کیس کے گواہان کو آئندہ سماعت پر طلب کرلیا گیا۔ سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی رہنما قادر پٹیل کا کہنا تھا کہ ان کے لئے قید و بند کی صعوبتیں نئی نہیں، وہ الزماات کا سامنا کرکے اپنی بے گناہی ثابت کریں گے۔ ایم کیو ایم رہنما روف صدیقی کا بھی کہنا تھا کہ انہیں عدالتوں پر مکمل اعتماد ہے، یقین ہے کہ انصاف کی فتح ہوگی۔ تقریباً ایک سال قبل درج ہونے والے مقدمے میں فرد جرم عائد ہونے کے بعد بھی کیس کی مزید سماعت 16 نومبر تک ملتوی کردی گئی۔ دوسری جانب عدالت نے مئیر کراچی وسیم اختر اور پیپلز پارٹی رہنما قادر پٹیل کی ضمانت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ ڈاکٹر عاصم۔ انیس قائمخانی اور روف صدیقی کی کیس میں درخواست ضمانت پہلے ہی ہائی کورٹ منظور کرچکی ہے۔

Share Button
loading...
loading...

About admin

loading...
Scroll To Top