شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / بین الاقوامی / تہران : سابق ایرانی صدر گرفتار

تہران : سابق ایرانی صدر گرفتار

تہران (مانیٹرنگ سیل) سابق ایرانی صدر محمود احمدی نژاد کو شیراز سے گرفتار کرلیا گیا، ان پر لوگوں کو بغاوت کیلئے اکسانے کا الزام عائد ہے۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد کو شیراز سے گرفتار کرلیا گیا، ان پر لوگوں کو بغاوت کیلئے اکسانے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ عرب میڈیا کا کہنا ہے کہ سابق ایرانی صدر کو گرفتاری کے بعد نظر بند کیا جاسکتا ہے۔ محمود احمدی نژاد کی ایک ویڈیو ٹیپ منظر عام پر آئی تھی جس میں انہوں نے ایرانی عوام کو مخاطب کرتے ہوئے انتہائی اثر و رسوخ رکھنے والے لاریجانی خاندان کا مذاق اڑایا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ خدا کی قسم میرے پاس ایسے بیٹے نہیں جو مغرب کیلئے جاسوسی انجام دیں، نہ میرے ایسے بھائی ہیں جو سامان کی اسمگلنگ میں سرگرم ہوں۔ اس کے علاوہ میں نے کوئی زمین بھی چوری نہیں کی جہاں میں مویشی پالوں۔ تازہ اطلاعات کے مطابق ایران کے شمالی شہر تبریز میں آباد ترک نسل کے افراد بھی حکومت کیخلاف احتجاج کیلئے سڑکوں پر نکل آئے ہیں اور ان کی فوج کے ایک یونٹ سے جھڑپ ہوئی ہے۔ واضح رہے کہ تقریباً 10 روز سے ایران کے مختلف شہروں میں حکومت مخالف مظاہرے جاری ہیں، ابتداء میں مہنگائی کیخلاف عوام سڑکوں پر نکلے تاہم حکومتی مشینری کی جانب سے احتجاج کو دبانے کی کوشش کے دوران لوگوں کی ہلاکتوں کے باعث مظاہرے دیگر شہروں تک پھیل گئے۔ احتجاجی مظاہروں اور پرتشدد واقعات میں 20 سے زائد افراد ہلاک، درجنوں زخمی اور سیکڑوں کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔

error: Content is Protected!!