شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / بھائی پھیرو:روڈ ڈکیتی کی وارداتوں میں ڈاکوؤں نے گاڑیوں کےمسافروں کو لوٹ لیا
loading...
بھائی پھیرو:روڈ ڈکیتی کی وارداتوں میں ڈاکوؤں نے گاڑیوں کےمسافروں کو لوٹ لیا

بھائی پھیرو:روڈ ڈکیتی کی وارداتوں میں ڈاکوؤں نے گاڑیوں کےمسافروں کو لوٹ لیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)شہر میں اورروڈ ڈکیتی کی وارداتوں میں دس مسلح ڈاکوؤں نے درجنوں کاروں ،ٹرکوں اور گاڑیوں کے مسافروں کو لاکھوں روپے کے سامان اور نقدی سے محروم کر دیا ۔تھانہ سرائے مغل اور بھائی پھیرو کی پولیس آپس میں حدود کے معاملے پر جھگڑتی رہی ۔شہریوں نے اپنی مدد آپ کے تحت ڈاکوؤں کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا مگر پولیس نے ڈاکوؤں کو چھوڑ دیا ۔ مقدمات بھی درج کرنے سے انکار کر دیا ۔شہریوں کا اعلیٰ پولیس احکام سے انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ رات بھائی پھیرو کے محلہ رسول پورہ کے رہائشی حکیم عباس کے گھر میں ایک نا معلوم برقع پوش لیڈی چور گھس آئی اور گھر کی تلاشی لے کر قیمتی سامان ایک گھٹری میں باندھ لیا ۔اسی اثنا پتا چلنے پر محلے والوں نے لیڈی چور کو پکڑ کر تھانہ سٹی پولیس کے حوالے کر دیا ۔مگر پولیس نے چور کو مک مکا کر کے چھوڑ دیا اور مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا ۔ڈکیتی کی واردات میں بھائی پھیرو کے محلہ انور ٹاؤن کے رہائشی رحمت شاہ ولد اسماعیل کے گھر میں چھ مسلح ڈاکودیواریں پھلانگ کر اندر گھس آ ئے اور اہل خانہ کو تشدد کا نشانہ بنا کر چار لاکھ روپے نقدی زیورات ،اور قیمتی سامان کل مالیتی ساڑھے چھ لاکھ روپے چھین کر فرار ہو گئے ۔شہری نے تھانہ سٹی میں مقدمے کے اندراج کے لئے درخواست دی مگر تاحال اسکا مقدمہ درج نہی کیا گیا ۔ ڈکیتی کی دوسری واردات میں گذشتہ رات بارہ مسلح ڈاکوؤں نے ہیڈ بلوکی روڈ پر مالی وال بند کے قریب ناکہ لگا کر درجنوں کاروں ٹرکوں اور بسوں کے مسافروں سے گن پوائنٹ پر لاکھوں روپے نقدی اور سامان چھین لیا ۔سرائے مغل پولیس اور تھانہ صدر بھائی پھیرو پولیس آپس میں تھانہ کی حدود کے معاملے پر جھگڑتی رہیں مگر کسی تھانے میں بھی ڈکیتی کا مقدمہ درج نہیں کیا گیا ۔ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں سے علاقہ میں خوف و ہراس پھیل چکا ہے مگر پولیس ڈکیتی کے مقدمات درج نہیں کرتی ہے ۔رحمت شاہ اور حکیم عباس نے مطالبہ کیا ہے کہ انکے ڈکیتی کے مقدمات درج کر کے انہیں انصا ف فراہم کیا جائے اور پکڑے گئے چور چھوڑنے والے پولیس ملازمین کے خلاف سخت کاروائی کی جائے

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top