شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / مانسہرہ:سابقہ پولیس کمانڈودو گروپوں کے تنازعہ کو حل کروانے کی کوشش میں فائرنگ سے جانبحق
loading...
مانسہرہ:سابقہ پولیس کمانڈودو گروپوں کے تنازعہ کو حل کروانے کی کوشش میں فائرنگ سے جانبحق

مانسہرہ:سابقہ پولیس کمانڈودو گروپوں کے تنازعہ کو حل کروانے کی کوشش میں فائرنگ سے جانبحق

مانسہرہ(ڈویژنل کرائمز رپورٹر) سابقہ پولیس کمانڈو’’شکیل احمد ‘‘دو گروپوں کے تنازعہ کو حل کروانے کی کوشش میں اپنے خالہ زادوں کی اندھا دھند فائرنگ سے جان کی بازی ہار گیا۔اندھا دھند گولیوں کی بوچھاڑ میں شکیل احمدکا بھائی بھی دم توڑ گیا۔ دو گروپوں کے مابین ہونے والے تصادم میں دو افرادبھی شدید زخمی ہو گئے۔ قاتل بعد وقوعہ موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ۔ دونوں گروپوں کی جانب سے ایک دوسرے کے خلاف مقدمات درج ۔ نعشیں پوسٹمارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے جبکہ زخمیوں کو طبی امداد کی فراہمی کے لئے کنگ عبداللہ ہسپتال سے شدید نازک حالت میں ایوب میڈیکل کمپلکس ریفر کر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز نیاز عرف ناجی اورعاقل کے مابین معمولی تنازعہ پر جھگڑا شروع ہوا ۔اس دوران شکیل احمد واقعہ کی اطلاع پاتے ہی ان کی خلاصی کروانے کے لئے موقع کی طرف روانہ ہوا کہ اس دوران عاقل کے دیگر بھائی بھی جھگڑے کی اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ گئے اور دونوں پارٹیوں کے مابین توں تکرار کے بعد خونریز تصادم شروع ہو گیا اور اندھا دھند فائرنگ کا سلسلہ شروع ہو گیا۔اندھا دھند فائرنگ کی زد میں آ کر شکیل ،جمیل پسران بشیر موقع پر ہی دم توڑ گئے جبکہ نیاز عرف ناجی ولد یوسف اور عاقل ولد چن زیب شدید زخمی ہو گئے۔ واردات کے بعد قاتل فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ جبکہ شدید زخمی افراد کو کنگ عبداللہ ہسپتال سے ایوب میڈیکل کمپلکس ریفر کر دیا گیا۔ دونوں بھائیوں کی میتیں پوسٹمارٹم کے لئے کنگ عبداللہ ہسپتال مانسہرہ پہنچائی گئیں۔ جہاں علاقہ کے افراد کی بڑی تعداد بھی واقعہ کی اطلاع پا کر موقع پر پہنچ گئے اورمقتولین کی نعشیں دیکھ کر ان کے عزیز واقارب کے ساتھ ساتھ ان کے دوست احباب میں داڑیں مار مار کر روتے رہے۔ کنگ عبداللہ ہسپتال میں پوسٹمارٹم کے بعد نعشیں ورثاء کے حوالے کر دی گئیں۔ جبکہ پولیس نے مقتول پارٹی کی جانب سے شمریز، عاقل،سنی اور کاشف پسران چن زیب اور چن زیب ولد درایمان کے خلاف مقدمہ رجسٹر کر لیا۔ جبکہ دوسری جانب سے عاقل کے زخمی ہونے کی بابت بھی مقدمہ رجسٹر کر لیا گیا۔ پولیس تاحال کسی بھی ملزم کو گرفتار کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی۔ واضح رہے کہ مقتول شکیل احمد پولیس کے سابقہ کمانڈو کی حیثیت سے فرائض سرانجام دے چکا ہے اور بالا گجر کا دست راست تھا۔

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top