شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / مانسہرہ: وفاقی حکومت نے سی پیک منصوبہ میں شامل آٹھ صنعتی زون چوری کئے ہیں،زرگل خان
loading...
مانسہرہ: وفاقی حکومت نے سی پیک منصوبہ میں شامل آٹھ صنعتی زون چوری کئے ہیں،زرگل خان

مانسہرہ: وفاقی حکومت نے سی پیک منصوبہ میں شامل آٹھ صنعتی زون چوری کئے ہیں،زرگل خان

مانسہرہ(قاضی بلال سے )وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ کے معاون خصوصی اور ڈویژنل صدر پاکستان تحریک انصاف زر گل خان نے کہا ہے کہ مانسہرہ اور تورغر میں صوبائی حکومت کے طرف سے سستی بجلی کے منصوبے ’’پن بجلی گھروں‘‘کی تعمیر میں وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدراور وفاقی وزیر حج و اوقاف سردار محمد یوسف سب سے بڑی رکاؤٹ ہیں جو ضلع کی دھرتی کو کبھی بھی خوشحال دیکھنا نہیں چاہتے۔ آئندہ کی حکمت عملی کو عملی جامہ پہنانے کے لئے صرف اپنے ووٹوں کی خاطر علاقہ کو پسماندہ رکھنا چاہتے ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف نے وفاق سے تلاشی کا جو عمل شروع کیا ہے یہ تلاشی کا عمل ضلعی سطح پر لا کر عوام کے خون پسینے کی کمائی ہڑپ کرنے والوں سے پائی پائی کا حساب لیں گے۔ 8 اکتوبرکے زلزلے کے بعد ضلع مانسہرہ کی تعمیر نو کے لئے آنے والے اربوں روپے کے فنڈز کی بندر باٹ کا صوبائی احتساب کمیشن کے ذریعے حساب لیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز مانسہرہ پریس کلب میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ضلع صدر پاکستان تحریک انصاف بابر سلیم سواتی اور پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والے ممبران ضلع کونسل کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔ زر گل خان نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے سی پیک منصوبہ میں شامل آٹھ صنعتی زون چوری کئے ہیں۔ جو باقی صوبوں کو نظر انداز کرکے صرف پنجاب کو نوازنے کی سازش ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضلع مانسہرہ میں گذشتہ روز سالانہ ترقیاتی پروگراموں کے حوالے سے اجلاس میں جو بندر بانٹ ہوئی ہے اس کا حساب بھی برابر کریں گے اور پی ٹی آئی کے ممبران کو ان سے محروم رکھنے پر ضلع ناظم مانسہرہ سردار سید غلام اور اس کے ٹولے کو عدالت کے کٹہرے میں گھسٹیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے صوبہ میں موجود تمام اراکین صوبائی اسمبلی کو مساوی فنڈ فراہم کئے ہیں اور کسی کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں کی۔ اسی طرح مختلف محکموں میں ملازمین بھی بھرتیوں کے دوران بھی میرٹ کو ملحوظ خاطر رکھا ہے اور کسی جگہ پر کوئی مداخلت نہیں کی۔ جبکہ ضلع مانسہرہ میں پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والے چوبیس ضلع کونسل کے ممبران کو ایک پائی کا فنڈ بھی فراہم نہیں کیا گیا اور ان کے حصے کا فنڈ فلور کراسنگ کرنے والے مختلف ممبران کو نوازنے کے لئے استعمال کیا گیا ہے۔ جو کہ لوکل گورنمنٹ رولز کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے اور ADPگائیڈ لائن 2016 ؁ء کو بلڈوز رولز کی بھی خلاف ورزی کی ہے۔ جس کے خلاف متعلقہ فورم کے ساتھ ساتھ ہائی کورٹ میں بھی اس متنازعہ ADPکو چیلنج کرکے عوام کو ان کا حق دلائیں گے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ضلع صدر پاکستان تحریک انصاف بابر سلیم سواتی نے کہا کہ اپنے ممبران ضلع کونسل کے ساتھ کوئی زیادتی برداشت نہیں کریں گے اور ممبران کے حق کے لئے ہر قسم کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ ممبر ضلع کونسل و سابق امیدوار ضلع ناظم شاہد رفیق خان نے کہا کہ ضلع کونسل نے قواعد وضوابط کی دھجیاں بکھیرتے ہوئے منتخب ممبران کو نظر انداز کرکے غیر منتخب لوگوں کی ایماء پر فنڈز کی بندر بانٹ کی ہے اور ضلع حکومت بنانے میں کردار ادا کرنے والے ممبران کو غیر قانونی طور پر کروڑوں روپے کے فنڈز رشوت کے طور پر دیئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ چھترپلین سے پی ٹی آئی کے منتخب ممبر ضلع کونسل نعیم شاہ سے الیکشن ہارنے والے ریاض علی شاہ کو چالیس لاکھ روپے کے فنڈز دیئے ہیں جبکہ منتخب ممبر کو ایک پائی بھی نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن اور فنڈز کی بندر بانٹ اور غیر منصفانہ تقسیم وزیر اعلیٰ پرویز خٹک اور عمران خان کے نوٹس میں لانے کے بعد اپنی پارٹی کا اجلاس بلا کر آئندہ کا لائحہ عمل طے کریں گے اور اپنے حق کے لئے اگر پورا ضلع جام کرنا پڑا تو اس سے بھی گریز نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ’’ن‘‘ استحصالی گروہ ہے جو وفاق سے لے کر ضلع تک عوام کے حقوق غضب کرنا اپنا حق سمجھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنی پارٹی کے وکلاء کی ٹیم سے مشاورت کے بعد ADP سال 2016-17 ؁ء کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس موقع پر ممبر ضلع کونسل گلناز شاہ نے کہا کہ ضلع مانسہرہ کو پسماندہ رکھنے میں سردار محمد یوسف کا بڑا اہم کردار رہا ہے انہوں نے 20 لاکھ عوام کی توہین کرتے ہوئے ضلع کو ایک ایسے نااہل شخص کے حوالے کیا ہے۔ جو ضلع ناظم تو دور کی بات ضلع ناظم کا نائب قاصد بننے کا اہل بھی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ایک سازش کے تحت ضلع مانسہرہ کو پسماندہ رکھا جا رہا ہے اور پی ٹی آئی کے ممبران کے فنڈ روکنے کا مقصد بھی یہ ہے کہ اگر یہ ممبران عدالت سے حکم امتناعی حاصل کرتے ہیں تو پی ٹی آئی کے دور میں کوئی کام نہیں ہو گا ۔ اس طرح یہ پی ٹی آئی کے ساتھ ساتھ عوام کے ساتھ دشمنی کا کردار ادا کر رہے ہیں اور ان کے ترقیاتی کاموں میں روڑے اٹکا رہے ہیں۔

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top