شہ سرخیاں
Home / بین الاقوامی / حجر اسود کو بوسہ‘ خواتین کیلئے علیحدہ وقت مقرر کرنے کی تجویز
loading...
حجر اسود کو بوسہ‘ خواتین کیلئے علیحدہ وقت مقرر کرنے کی تجویز

حجر اسود کو بوسہ‘ خواتین کیلئے علیحدہ وقت مقرر کرنے کی تجویز

جدہ (ڈیسک نیوز) حج اور عمرہ کے لیے مکہ مکرمہ جانے والی خواتین کے لیے بڑی خوشخبری۔ سعودی شوریٰ کونسل کی خواتین کو حجر اسود کو بوسہ دینے کی سعادت حاصل کرنے کے لیے وقت مقرر کرنے کی تجویز۔ چوبیس گھنٹوں میں سے چھ گھنٹے صرف خواتین کے لیے مختص ہوں گے۔تفصیلات کے مطابق حج اور عمرہ پر جانے والے ہر مسلمان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ حجر اسود کو بوسہ دے سکے لیکن بہت زیادہ رش کی وجہ سے حجراسود کو بوسہ دینا مردوں کے لیے مشکل ہوجاتا ہے تو خواتین کو ان سے زیادہ دشواری پیش آتی ہے۔سعودی عرب کی شوریٰ کونسل نے اس حوالے سے خواتین کے لیے ٹائم ٹیبل مقررکرنے کی تجویز دی ہے جس میں حجر اسود کو بوسہ دینے کے لیے دن بھر میں تین اوقات صرف خواتین کے لیے مخصوص ہوں گے اور ہر دورانیہ دوگھنٹوں پر مشتمل ہوگا۔ اس طرح چوبیس گھنٹوں میں 6 گھنٹے حجر اسود صرف خواتین کے لیے مخصوص ہوگا اور خواتین آسانی کے ساتھ جنت کے اس پتھر کو بوسہ دے سکیں گی۔ان اوقات میں مردوں کی حجر اسود کے قریب آمد ممنوع قرار دے دی جائے گی۔ سعودی شوریٰ کونسل میں اسلامی امور کی خصوصی کمیٹی کے مطابق یہ اقدام خواتین کی سہولت کے لیے کیا جارہا ہے۔ اس تجویز کو جلد ووٹنگ کے ذریعے عملی جامہ پہنایا جائے گا۔حجر اسود بیت اللہ کے جنوب مشرقی کونے میں نصب 20 سینٹی میٹر کا وہ جنت کا کالا گول پتھر ہے جس سے بیت اللہ کے طواف کی ابتدا کی جاتی ہے اور طواف کا ساتواں چکر ختم بھی حجر اسود پر ہی کیا جاتا ہے۔

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top