شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / بھائی پھیرو:سرکاری ہسپتال میں دائی ہی ڈاکٹر بن کر ڈیلیوری کرنے لگی
loading...
بھائی پھیرو:سرکاری ہسپتال میں دائی ہی ڈاکٹر بن کر ڈیلیوری کرنے لگی

بھائی پھیرو:سرکاری ہسپتال میں دائی ہی ڈاکٹر بن کر ڈیلیوری کرنے لگی

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو ۔سرکاری ہسپتال میں دائی ہی ڈاکٹر بن کر ڈیلیوری کرنے لگی ۔عملہ کی غفلت سے ڈلیوری کے دوران بچہ جاں بحق ماں کی حالت غیر۔ بچے کے ورثا کا ہسپتال کے احاطے میں احتجاج ۔ زچہ کی حالت پہلے ہی نازک تھی ۔ہسپتال کا عملہ ۔ تفصیلات کے مطابق سرکاری ہسپتال میں ڈلیوری کے دوران نومولود جاں بحق ہو گیا جس پر بچے کے ورثا نے ہسپتال کے احاطے میں احتجاج کیا ۔محلہ عید گاہ روڈ کا اسلم اپنے بھتیجے فیکٹری ملازم ظہور کی بیوی کوثر کو گذشتہ روز ڈلیوری کے لئے ہسپتال لے کر آیا ۔جہاں ورثا کے مطابق لیڈی ڈاکٹر موجود نہ تھی وہاں پر موجود دائی پروین نے انکو اپنی رہائش گاہ لنگڑے والی ڈھاری پر جانے کا کہا مگر زچہ کی حالت اس قابل نہ ہونے پر وہی پر ڈلیوری کی کوشش میں بچہ جاں بحق ہو گیا اور ماں کی حالت غیر ہو گئی ۔ جس پر لواحقین سیخ پا ہو گئے اور عملے کے خلاف ہسپتال میں شدید احتجاج کیا ۔ اس ضمن میں جب لیڈی ڈاکٹر اقراء وقاص سے پوچھ اگیا تو انہوں نے بتایا کہ وہ ڈیوٹی پر موجود تھیں وہ ہی مریض کی کونسلنگ کر رہی تھی اور قبل از وقت بھی وہی مریضہ کا چیک اپ کرتی رہی ہیںْ جب مریضہ ہسپتال آئی تو انکی حالت اس قابل نہ تھی کہ کسی اور ہسپتال ریفر کیا جائے بچے کا دل بھی بائیں طرف تھا ۔موت ایک قدرتی امر تھا اور لواحقین بھی مطمن تھے تاہم دائی کے رویے اور مریضہ کو گھر منتقل کرنے کے حوالے سے اسے کوئی علم نہیں ہے بچے کے ورثاء نے دائی پروین کے خلاف مقدمہ درج کرانے کے لئے پولیس س رجوع کر لیاْ

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top