شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / بھائی پھیرو:ذیابیطس کے عالمی دن کے موقع پر الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت سیمینار
loading...
بھائی پھیرو:ذیابیطس کے عالمی دن کے موقع پر الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت سیمینار

بھائی پھیرو:ذیابیطس کے عالمی دن کے موقع پر الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت سیمینار

بھائی پھیرو(نامہ نگار)ذیابیطس کے عالمی دن کے موقع پر الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت سیمینار۔عوام اور ڈاکٹروں کی بھاری تعداد میں شرکت۔جسمانی ورزش کی کمی’ جنک فوڈ، غیر متوازن اور غیر صحت مند غذا کا زیادہ استعمال، سگریٹ نوشی بھی ذیابیطس کے خطرے میں اضافے کا سبب بنتی ہے‘۔ماہر معالج کی ہدایات پر عمل کرکے اس بیماری کے نقصانات سے کافی حد تک بچا جا سکتا ہے ،ماہرین کا سیمینار سے خطاب۔تفصیلات کے مطابق ذیابیطس کے عالمی دن کے موقع پر الخدمت فاؤنڈیشن کے تحت سیمینار منعقد ہوا جس میں عوام ،زیا بیطس کے مریضوں اور ڈاکٹروں کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔ الخدمت فاؤنڈیشن کے ضلعی صدر ڈاکٹر رانا سرفراز احمد خاں کی صدارت میں ہونے والے اجلاس کا اہتمام مقامی صدر ملک محمد اکرم بوٹا نے کیا۔اجلاس سے خطاب کرتے ڈاکٹر محمد اقبال میو نے کہا کہ پاکستان میں صورت حال زیادہ سنگین ہے۔انھوں نے کہا کہ دو سال پہلے انھوں نے ایک سروے کیا جس سے یہ پتہ چلا ہے کہ اس علاقے میں بارہ سال سے زیادہ عمر کے چودہ فیصد افراد ذیابیطس کے شکار ہیں۔انھوں نے کہا کہ اگر اس کی بنیاد پر نتیجہ اخذ کیا جائے تو پھر پاکستان بھر میں ایک کروڑ سے ایک کروڑ تیس لاکھ افراد ذیابیطس سے متاثر ہیں۔ڈاکٹر محمد اشرف نے کہا کہ پاکستان میں سرکاری سطح پر ذیابیطس کی روک تھام کی خاطر اقدامات کیے جارہے ہیں۔انھوں نے کہا بنیادی صحت کے مراکز اور اسپتالوں میں علاج معالجے کی سہولیات فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ بہتر تشخیص کی بھی کوششیں کی جارہی ہیں۔ڈاکٹر عمر مجاہد نے کہا کہ الخدمت فاؤنڈیشن اس بیماری سے بچنے کے لیے آگاہی مہم چلا رہی ہے۔ ان اقدامات کے اچھے نتائج نکلیں گے اور اگر دوسری این جی اوز بھی یہ پروگرام ترجیحی بنیادوں پر جاری رکھیں تو پاکستان اس بیماری کا بوجھ کم کرسکتا ہے۔مگر پاکستان کو ذیابیطس پر قابو پانے کے لیے ایک لمبا سفر طے کرنا ہے۔ڈاکٹر رانا سرفراز احمد خاں نے کہا کہ علاج معالجے کے ساتھ ساتھ حکومت کو قانون سازی کرنا پڑے گی جس کے ذریعے فاسٹ فوڈ فروخت کرنے والوں کو پابند کیا جانا چاہیے کہ خوراک پر واضح طور پر درج کریں کہ اس میں کیلوریز کی کتنی مقدار ہے۔اس کے علاوہ لوگوں کی واک یا چہل قدمی کے لیے حکومت کو زیادہ سے زیادہ پارک بنانے چاہئیں اور انھیں سائیکلینگ کی طرف راغب کیا جانا چاہیے جس کے لیے انھیں سہولیات بھی فراہم کی جائیں۔انٹرنیشنل ڈائیبٹیس فیڈریشن کے مطابق اس وقت دنیا بھر میں چھتیس کروڑ سے زیادہ افراد ذیابیطس سے متاثر ہیں جبکہ ہر سال چھیالیس لاکھ لوگ اس مرض کی وجہ سے مرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں الخدمت فاؤنڈیشن کے ہسپتال زیا بیطس کے مریضوں کیلیے کیمپ لگا کر مریضوں کا مفت معائنہ کرتے ہیں ۔کسان بورڈ پاکستان کے سیکرٹری اطلاعات حاجی محمد رمضان نے کہا کہ شوگر ملیں اس بیماری کو پھیلانے کی بڑی وجہ ہیں ۔جدید تحقیق کے مطابق سفید چینی کو سفید زہر کہا جا تا ہے۔اس کے علاوہ شوگر ملیں کسانوں کے گنے کے واجبات دبا کر ،کٹوتیاں کرکے اور وزن میں ہیرا پھیری کر کے کروڑوں کسانوں کو ٹینشن میں مبتلا کر تی ہیں اور ٹینشن اس بیماری کے اضافہ کا بڑا سبب ہے۔اس موقع پر کئی مریضوں کا شوگر کا مفت معائنہ کیا گیا۔آخر میں الخدمت فاؤنڈیشن کے مقامی رہنما ملک محمد اکرم بوٹا نے شرکا کا شکریہ ادا کرتے اعلان کیا کہ جلد ہی اس علاقے میں شوگر کے مریضوں کا سروے کر اکے ان کے علاج معالجے کیلیے مقامی سرکاری ہسپتالوں میں انسولین اور دوسری ادویات ادویات کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top
web stats