شہ سرخیاں
Home / پاکستان / پی ٹی آئی نے سچ خود ہی دفن کردیا، سپریم کورٹ
loading...
پی ٹی آئی نے سچ خود ہی دفن کردیا، سپریم کورٹ

پی ٹی آئی نے سچ خود ہی دفن کردیا، سپریم کورٹ

اسلام آباد(بیوروچیف)سپریم کورٹ نے پاناما لیکس تحقیقات کیس میں کہا ہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے جمع کرائی گئی دستاویزات کا مقدمے سے کوئی تعلق نہیں،درخواست گزار نے خود ہی سچ کو دفن کردیا ہے، کرپشن کی تحقیقات سپریم کورٹ کا کام نہیں ہے۔ سپریم کورٹ میں پانامالیکس کے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس سپریم کورٹ کی سر براہی میں پانچ رکنی لارجر بینچ نے کیس کی سماعت کی ، عدالت میں پی ٹی آئی کی جانب سے چھ سو چھیاسی صفحات پر مشتمل پانامالیکس کے خلاف مزید شواہد عدالت میں پیش کئے گئے تھے جس پر ریمارکس دیتے ہوئے جسٹس عظمت نے کہا کہ پی ٹی آئی کی جانب سے اخبار کے تراشے کو ثبوت بنا کر پیش کیا گیا ہے اخبار میں ایک بار خبر چھپ گئی تو وہ پھر پکوڑے بیچنے کے لئے استعمال ہوتی ہے اخباری خبر کی بنیاد پر فیصلے نہیں کئے جاسکتے وہ دستاویزات دیں جن سے معاملات کو آگے بڑھایا جا سکے ان دستاویزات کا کوئی سر ہے نہ پیر۔دوسری جانب وزیراعظم اور مریم صفدر کی جانب سے جمع کروایا گیا جبکہ حسن اور حسین نواز کی جانب سے جواب جمع نہ کروانے پر عدالت کا استفسار کیا کہ ان کے جوابات کہاں ہے جس پر ان کے وکیل اکرم شیخ نے عدالت کو بتایا کہ ہم جواب داخل کراچکے ہیں جس پر جسٹس عظمت نے ریمارکس دئیے کہ فی الحال جواب ہم تک آپ تک نہیں پہنچادوران سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ نے وزیراعظم کے وکیل اسلم بٹ سے استفسار کیا کہ وزیر اعظم نے پارلیمنٹ میں کہا تھا کہ جو بچا کچا سرمایہ تھا اس سے دبئی میں مل لگائی گئی اسی طرح دبئی والی مل فروخت کرکے عزیزیہ میں مل لگائی گئی لیکن وزیر اعظم کے عوامی موقف میں اور آپ کے بیان میں فرق ہےپانامالیکس کی سماعت پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہم نےعمران خان کا مقدمہ اس لئے اٹھایا کہ چار پانچ اپارٹمنٹس کا سوال تھا  اسی لئے ہم نے اس کیس کو پہلے سنا ، پاناما لیکس پر تحقیقات کرنا عدالت کا کام نہیں یہ اہم نوعیت کا فیصلہ ہے جس کا باریک بینی سے جائزہ لیا جائے گا اب جبکہ تمام دستاویزات آگئی ہے اگلہ مرحلہ کمیشن کو تشکیل دینے کا ہےکیس کی سماعت کے دوران تحریک انصاف کے وکیل حامد خان نے عدالت سے استدعا کی کہ جمع کرائی گئیں دستاویزات کے مطالعے کے لیے انہیں اڑتالیس گھنٹوں کا وقت دیا جائے۔ عدالت نے فریق مقدمہ بننے کی مختلف درخواستیں مسترد کرتے ہوئے مزید سماعت جمعرات تک ملتوی کردی۔

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top