شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / ٹیکسلا:کباڑ کے طور پر استعمال ہونے والے خالی پلاٹ میں موجود مارٹر بم کے خالی خولوں میں آتشزدگی
loading...
ٹیکسلا:کباڑ کے طور پر استعمال ہونے والے خالی پلاٹ میں موجود مارٹر بم کے خالی خولوں میں آتشزدگی

ٹیکسلا:کباڑ کے طور پر استعمال ہونے والے خالی پلاٹ میں موجود مارٹر بم کے خالی خولوں میں آتشزدگی

ٹیکسلا ( ڈاکٹر سید صابر علی سے )واہ کینٹ کے علاقہ محلہ سلیم نگر میں کباڑ کے طور پر استعمال ہونے والے خالی پلاٹ میں موجود مارٹر بم کے خالی خولوں میں آتشزدگی ، اچانک آگ بھڑکنے سے علاقہ میں خوف و ہراس پھیل گیا، اطلاع ملتے ہیں فائر برگیڈ اور ریسکیو 1122 کی امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں بیس منٹ کے بعد آگ پر قابو پالیا گیا، تاہم کوئی جانی نقصان نہ ہوا،آبادی کے عین درمیان میں کباڑ خانے کی موجودگی پر اہل علاقہ نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کافی عرصہ سے یہاں مارٹر بم پلاسٹک کے خالی خول کا ٹمپ لگا ہوا تھا جسے متعدد مرتبہ اہل علاقہ نے مالک کو ہٹانے کا کہا مگر اس نے ہمیشہ سنی ان سنی کر دی ، آتشزدگی کے باعث ارد گرد کے مکانات کو بھی شدیدخدشات لاحق تھے جس سے کسی بھی وقت جانی نقصان کا اندیشہ منڈلاتا رہتا تھا،آگ لگنے کی اصل وجہ معلوم نہ ہوسکی،تفصیلات کے مطابق واہ کینٹ کے علاقہ سلیم نگر میں آبادی کے درمیان موجود خالی پلاٹ میں رکھے پلاسٹک میڈ مارٹر بم کے خلای خولوں جس کی تعداد سینکڑوں میں بتائی جاتی ہے منگل کے روز دن کے وقت اچانک آگ بھڑک اٹھی، آگ کے شعلے اتنے بلند تھے کہ اہل محلہ میں خوف و ہراس پھیل گیا ، اہلیان علاقہ نے آتشزدگی کی اطلاع فوری طور پر فائر برگیڈ اور ریسکیوکو دی جس کے بعد امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور آگ پر قابو کیا،اہل علاقہ کے مطابق مذکورہ کباڑ خانہ شیخ محمد اعجاز المعروف صدیقی کا ہے جو کہ پرائیویٹ کنٹریکٹر کے طور پر کام کرتا ہے،ریسکیو زرائع کے مطابق کباڑ خانہ میں مارٹڑ بم کے پلاسٹک کے بنے خالی خول تھے ، بیس منٹ کی امدادی کاروائی سے آگ پر قابو کیا گیا، اگر آگ پر فوری قابو نہ کیا جاتا تو آگ ارد گرد کے مکانات کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیتی ،اہل علاقہ نے میڈیا کو بتایا کہ اتنی بڑی تعداد میں آبادی کے درمیان اس قسم کا کباڑ خانہ کسی بھی بڑے حادثہ کو موجب بن سکتا ہے جس کی بابت متعدد مرتبہ مذکورہ شخص کو بتایا گیا مگر اس نے ہمیشہ سنی ان سنی کردی جس کی وجہ سے آج اتنا بڑا حادثہ رونما ہوا ،اگر بر وقت فائر برگیڈ اور ریسکیو کی امدادی ٹیمیں نہ پہنچتیں تو آتشزدگی کسی بڑے سانحہ کو موجب بن سکتی تھی،انھوں نے متعلقہ حکام سے اپیل کی کہ انسانی جانوں سے کھیلنے والے شخص کے خلاف کاروائی کی جائے جس نے آبادی میں کباڑ خانہ قائم کر کے لوگوں کی زندگیوں کو عذاب میں مبتلا کر رکھا ہے

Share Button
loading...
loading...

About aqeel khan

loading...
Scroll To Top