شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / بھائی پھیرو و گرونواح میں گندے پانی سے سبزیاں اُگانے کا سلسلہ نہ رُک سکا

بھائی پھیرو و گرونواح میں گندے پانی سے سبزیاں اُگانے کا سلسلہ نہ رُک سکا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو و گرونواح میں گندے پانی سے سبزیاں اُگانے کا سلسلہ نہ رُک سکا ،زہریلے و گندے پانی سے اُگنے والی سبزیاں کھانے سے شہری مختلف مُوذی بیماریوں میں مبتلا ،شہری و سماجی حلقوں کاوزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔
تفصیلات کے مطابق۔بھائی پھیروو گردونواح میں گندے و زہریلے پانی سے اُگائی جانے والی سبزیوں ودیگر فصلوں کا سلسلہ تاحال نہ رُک سکاجبکہ گندے و زہریلے پانی سے اُگائی جانے والی سبزیاں و دیگر فصلیں نہ صرف سرائے مغل ،بھائی پھیرو اور پتوکی کی منڈیوں بلکہ دوسرے بڑے شہروں میں بھی سپلائی کی جاتی ہیں جسے کھانے سے شہری مختلف قسم کی خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہو کر ہسپتالوں تک جا پہنچتے ہیں اوریہاں پر قابل غور بات یہ بھی ہے کہ گندہ پانی استعمال کرنے والے ممالک میں سے پاکستان سرفہرست ہے کیونکہ پاکستان میں 50فیصد سے زائد سبزیاں پھل اور دیگراجناس گندے پانی سے ہی کاشت ہو رہی ہیں جبکہ آلودہ پانی میں جہاں پر دیگر جراثیم موجود ہوتے ہیں وہیں پر آرسینک بھی موجود ہوتا ہے جس سے جگر ،ہیضہ ،ہیپاٹائٹس وغیرہ ہونے کے قوی امکان ہوتے ہیں۔اکثر سبزیاں گندے پانی سے ہی دھوئی جاتی ہیں جس سے سبزیاں زہر آلود اور جراثیم زدہ ہوکر انسانی جانوں کیلیے خطرہ بن جاتی ہیں۔امیدوارجماعت اسلامی حلقہ قومی اسمبلی NA 140 حاجی محمد رمضان سمیت شہری و سماجی حلقوں کا کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب کو اس طرف بھی دھیان دینا چاہیے اور گندے و زہر آلود پانی کے حوالے سے ہنگامی طور پر اقدامات اٹھانے چاہیے

error: Content is Protected!!