شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / متحدہ مجلس عمل بھائی پھیرو کے رہنماؤں کا ایم ایم اے کے رہنماؤں اور کارکنوں کو کامیاب جلسہ پرخراج تحسین

متحدہ مجلس عمل بھائی پھیرو کے رہنماؤں کا ایم ایم اے کے رہنماؤں اور کارکنوں کو کامیاب جلسہ پرخراج تحسین

بھائی پھیرو(نامہ نگار)سیکولر قوتوں کا ہر محاز پر ڈٹ کر مقابلہ کیا جائے گا ۔ پاکستان اسلام کے لئے بنا ہے اور اسے ایک اسلامی سپر طاقت بنائیں گے ۔کامیاب جلسہ پر ایم ایم اے کے رہنماؤں اور کارکنوں کو خراج تحسین۔ کامیاب جلسہ سے سیکولرزم کے حامیوں پر لرزہ طاری ہے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزمتحدہ مجلس عمل بھائی پھیرو کے رہنماؤں جماعت اسلامی کے مقبول حسین کمبوہ،جے یو پی کے مشتاق نورانی،جمعیت اہلحدیث کے مولانا معاذ خالد،جے یو آئی کے رانا ظہیراحمد،راؤ اویس،مولانا سفیان معاویہ نے اپنے علیحدہ علیحدہ اخباری بیان میں ایم ایم اے کے مینار پاکستان کے کامیاب جلسہ پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایم ایم اے کے رہنما اورکارکن مبارکباد کے مستحق ہیں۔انہوں نے کہا کہ سیکولر قوتوں کا ہر محاذ پر ڈٹ کر مقابلہ کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریت کے خواہاں ہیں لیکن ٹرمپ والی جمہوریت کے نہیں۔ ہم اللہ اور اللہ کے رسول ﷺ کی جمہوریت کے حامی ہیں۔ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ پاکستان سیکولر ملک ہے لیکن ہم کہتے ہیں پاکستان اسلام کے لئے بنا ہے اور اسے ایک اسلامی سپر طاقت بنائیں گے۔پاکستان اللہ کی رحمت اور ہمارے لئے ماں کی گود اور مسجد کی طرح ہے۔ ہمارے نوجوانوں نے پاکستان کے لئے قربانیاں دی ہیں۔ ہم نوجوانوں کے لئے ایوانوں کے دروازے کھولنا چاہتے ہیں۔ ہم ملک کی ترقی اور نوجوانوں کے لئے روزگار کی بات کرتے ہیں۔ ملک میں بدامنی اور بے روزگاری حکمرانوں کی وجہ سے ہے۔ ہم انتہا پسندی کو پسند نہیں کرتے، جس طرح ہم انتہا پسندی کے خلاف ہیں اسی طرح سیاست میں بھی گولی اور گالی کے خلاف ہیں۔ حکومت میں آکر نوجوانوں کو روزگار، تعلیم اور کھیل کی سہولتیں دیں گے ،پاکستان ایک نظریہ، فلسفہ اور نصب العین ہے، پاکستان مدینہ کی اسلامی ریاست کی طرح ایک ریاست قائم کرنے اور دنیا کے سامنے ماڈل پیش کرنے کا نام ہے۔ پاکستان مدینہ کے بعد اس زمین پر مقدس ترین مقام ہے۔ اس کی حفاظت کرنا اور اس کے لئے لڑنا جہاد ہے، ہم اس کی حفاظت کریں گے۔ ہم نے لا الہ الااللہ کے منشور اور سلوگن کو محفوظ بنانا ہے۔ جو لوگ کہتے ہیں کہ پاکستان کو سیکولر ملک بننا چاہئے، میں ان سے کہتا ہوں کہ قائد، اقبال اور لاکھوں شہید ہونے والوں سے پوچھیں کہ انہوں پاکستان اور اسلام کی خاطر قربانیاں دی ہیں یا سیکولرازم یا لبرل ازم کے لئے۔ہم سیکولر ازم اور لبرل ازم قبول نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے جمہوریت پسند لوگ آمریت کو پسند نہیں کریں گے۔ ہم کسی قسم کا مارشل لاء تسلیم نہیں کریں گے۔ پاکستان میں صرف اور صرف اسلامی نظام چلے گا اور اسلام کے سائے میں جمہوریت چلے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسا پاکستان چاہتے ہیں جس میں ہمارے بچے روزگار سے محروم نہ رہیں۔ ہماری حکومت آئی تو ہر نوجوان کو روزگار دیں گے اور ہر یونین کونسل کی سطح پر کھیلوں کے میدان بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ آئندہ الیکشن میں انشا ء اللہ متحدہ مجلس عمل پاکستان کی سیاست کا رخ موڑ دے گااور انشا اللہ آئندہ الیکشن میں لٹیروں اور سیکولر قوتوں کو شکشت فاش ہوگی

error: Content is Protected!!