شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / بھائی پھیرو:سول ہسپتال میں ا دویات نایاب،مریضوں کوپرچی دیکرٹرخا دیا جاتا ہے

بھائی پھیرو:سول ہسپتال میں ا دویات نایاب،مریضوں کوپرچی دیکرٹرخا دیا جاتا ہے

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔سول ہسپتال میں ا دویات نایاب ،جبکہ مریضوں کو صرف پرچی دیکر ٹرخا دیا جاتا ہے ۔رورل ہیلتھ سینٹر بھائی پھیرومیں آنے والے مریضوں کی تعداد سینکڑوں،ڈاکٹروں کی کمی اور ادویات نہ ہونے سے مریض ذلیل و خوار،،ایمر جنسی میں آنے والے مریض ادویات نہ ہونے کی وجہ سے مرنے لگے۔شہری حلقوں کا ذمہ داران کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق بھائی پھیرو میں رورل ہیلتھ سینٹر بھائی پھیرو میں روزانہ آنے والے سینکڑوں مریضوں کے لیے ناکافی تو ہے ہی لیکن قابل افسوس بات یہ ہے کہ ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی ہے اور ہسپتال میں ادویات بھی موجود نہیں۔ایمرجنسی میں ہسپتال میں سرنجیں اور پٹیاں بھی موجود نہیں۔ ہیلتھ سینٹر مریضوں سے کھچا کھچ بھرا رہتا ہے مگر ادویات نہ ہونے سے مریضوں کو ادویات باہر سے خریدنا پڑتی ہیں۔میڈیکل ٹیسٹوں کیلیے ہسپتال کے اندر غیر قانونی طور پر ایک پرائیویٹ شخص بیٹھا ہوا ہے جو مریضوں کی کھال اتارتا ہے ۔ موجود مریض ہسپتال کے ناقص انتظامات پر الزامات لگاتے ہوئے اُن پر برس پڑے اور کہنے لگے کہ اکثر ہم لوگ ڈاکٹر موجود نہ ہونے اور ادویات نہ ہونے کی وجہ سے گھروں کو واپس لوٹ جاتے ہیں یا بوجہ مجبوری عطائیوں کے ہتھے چڑھ کے لٹ جاتے ہیں اور اگر کبھی ڈاکٹر مل بھی جائے تو وہ بھی ہمیں نسخہ لکھ کر دے دیتا ہے جوہمیں باہر سے ہی دوائی خریدنی پڑتی ہے۔ سماجی رہنما ملک محمد عثمان اورعوامی سماجی حلقوں نے محکمہ ہیلتھ کے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ہسپتال میں ڈاکٹروں اور ادویات کی کمی کو فوری طور پر پورا کیا جائے اور پرائیویٹ ٹیسٹ کرنے والے کی تحقیقات کی جائے

error: Content is Protected!!