شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / مریم نواز کے کاغذات نامزدگی منظور

مریم نواز کے کاغذات نامزدگی منظور

لاہور (پاک نیوز) سابق وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی اور رہنما مسلم لیگ (ن) مریم نواز کے این اے 127 سے کاغذات نامزدگی منظور کرلیے گئے ہیں۔ریٹرننگ افسر نے گذشتہ روز محفوظ کیا گیا فیصلہ سنا دیا ہے۔درخواست گزار نے مریم نواز کے دو پاسپورٹ رکھنے کو مدعا بنا کر کاغذات نامزدگی پر اعتراض اٹھایا تھا اور موقف اپنایا تھا کہ مریم نواز کے پاس دو پاسپورٹس ہیں۔  ایک پر ان کا نام مریم نواز اور دوسرے پر مریم صفدر ہے لہٰذا ان کے کاغذات نامزدگی مسترد کیے جائیں۔گذشتہ روز مریم نواز کے این اے 125 سے کاغذات نامزدگی پر لگائے گئے اعتراضات پر فیصلہ محفوظ کرلیا گیا۔ مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز پی پی 173 اور این اے 125 پر کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کیلئے ایوان عدل پہنچیں جہاں کارکنوں کی جانب سے ان پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔ ایوان عدل روانگی سے قبل مریم نواز کی جانب سے چار بکروں کا صدقہ بھی دیا گیا۔بعد ازاں مریم نواز این اے 125 سے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کیلئے سیشن کورٹ میں ریٹرننگ افسر کے روبرو پیش ہوئیں۔ ریٹرننگ افسر نے سوال کیا کہ پانی کو محفوظ اور دہشتگردی کو کنٹرول کرنے کیلئے کیا کریں گے؟ جس کے جواب میں مریم نواز نے کہا ڈیم بنائیں گے، پانچ سال سے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے کوشش کر رہے ہیں۔ ہم نے سیکیورٹی کو بہتر کیا۔ بعد ازاں این اے 125 سے ڈاکٹر یاسمین راشد سکروٹنی کیلئے سیشن کورٹ پیش ہوئیں۔پی ٹی آئی کی یاسمین راشد نے مریم نواز کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ مریم نوازکاکیس نیب کورٹ میں ہے، ان کے کاغذات نامزدگی منظور نہ کئے جائیں۔ جس پرمریم نواز کے وکیل نے کہا کہ ڈاکٹریاسمین راشد عدالت میں شواہد پیش کریں،مریم نواز نے کاغذات نامزدگی میں تمام حقائق لکھے ہیں جبکہ وہ باقاعدہ ٹیکس اداکرتی رہی ہیں۔ کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے دوران میڈیا سے بات کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ پرویز مشرف کو باہر بھجوانے کے لئے ایک سو بیس دن کا دھرنا دیا گیا۔ ایک آمر کو آزادی دی جارہی ہے جبکہ عوام کے منتخب نمائندے کو رسوا کیا جارہا ہے۔ آئین کو توڑنے والے آمر کو فاضل جج صاحب واپس بلا کر تحفظ دے رہے ہیں۔ نواز شریف کے خلاف طے شدہ اسکرپٹ کے تحت کام کیا جا رہا تھا لیکن وہ اسکرپٹ ناکام ہو گیا ہے۔ چالیں چلنےکاوقت نکل گیا، (ن) لیگ ہی وفاق اور پنجاب میں حکومت بنائے گی۔ مریم نواز کا کہنا تھا کہ اللہ تعالیٰ ملک کو مصیبتوں سے نجات عطا فرمائے اور (ن) لیگ کو ووٹ کی عزت کی مہم میں کامیابی عطا فرمائے۔میڈیا سے گفتگو میں مریم نواز نے کہا کہ عید والدہ کے ساتھ مناؤں گی۔ سابق وزیراعظم کی صاحبزادی کا کہنا تھا کہ ملک، قوم اور ووٹ کی عزت کےلئے باہر نکلی ہوں، ووٹ کی عزت کا وقت آگیا بہت قریب ہے، ووٹر سے کہتی ہوں کہ وہ باہر نکلیں کیونکہ ابھی نہیں تو کبھی نہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی یا قومی اسمبلی میں بیٹھنے کا فیصلہ وقت آنے پر سوچ سمجھ کر کروں گی۔ چوہدری نثار کو انتخابی ٹکٹ دینے سے متعلق سوال پر مریم نواز نے کہا کہ امیدواروں کو انتخابی ٹکٹ دینے کا فیصلہ مجھے نہیں پورے پارلیمانی بورڈ کو کرنا ہے۔ شیخ رشید کی اہلیت سے متعلق فیصلے پر مریم نواز نے کہا کہ انہوں نے شیخ رشید کا فیصلہ سننا بھی گوارا نہیں کیا کیونکہ جب آپ کو پتہ ہو کہ فیصلہ کیا آنا ہے تو سننے کا کیا فائدہ۔

error: Content is Protected!!