شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / اوکاڑہ: جیل میں موبائل فون اور منشیات کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا . سپریٹنڈنٹ جیل نور حسن بھگیلا
loading...
اوکاڑہ: جیل میں موبائل فون اور منشیات کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا . سپریٹنڈنٹ جیل نور حسن بھگیلا

اوکاڑہ: جیل میں موبائل فون اور منشیات کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا . سپریٹنڈنٹ جیل نور حسن بھگیلا

اوکاڑہ( بیورورپورٹ)

سپریٹنڈنٹ ڈسٹر کٹ جیل اوکاڑہ نور حسن بھگیلا نے کہا ہے کہ ڈسٹر کٹ جیل اوکاڑہ میں سموکنگ زون بنائے جائیں گے ہر جگہ پر سگریٹ پینے کی اجازت نہیں ہو گی،قیدیو ں کو کمپوٹر اور قرآن پاک کی تعلیم دی جارہی ہے،قیدیوں کو فٹبال اور والی بال کی گیم کروائی جارہی ہے،جیل میں موبائل فون اور منشیات کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا ، جیل کے کچن اور ہسپتال کی دیکھ بھال خود کرتا ہوں ان خیالات کا اظہار انہوں نے امریکہ سے پاکستان آمد کے بعد جیل میں ریجنل یونین آف جرنلسٹس اوکاڑہ اور ڈسٹر کٹ یونین آف جرنلسٹس اوکاڑہ کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ وفد میں ضلعی صدر ڈی یو جے عرفان نوید غوری ،ضلعی جنرل سیکرٹری آر یو جے آصف نواز خاں ، تحصیل صدر اوکاڑہ رائے امداد علی تبسم کھرل ، سینئر صحافی مقصود خاں غوری ودیگر شامل تھے ۔ نور حسن بھگیلا نے کہا کہ آئی جی جیل خانہ جات کی خصوصی ہدایت پر ایک سیمینار میں امریکہ شرکت کا موقع ملا ، وہاں پر جاکر جیل میں قیدیوں کو فلاح وبہود کے لیے کام کرنے اور مختلف شعبہ جات کے بارے تبادلہ خیال ہو ا جیل خانہ جات کے افسران نے ڈسٹر کٹ جیل میں ہونے والے کام کو خوب سہراہا انہوں نے کہا کہ امریکہ میں ہونے والے کام کو دیکھ کر آیا ہو ں اللہ نے موقع دیا تو جیل کو مزید بہتر بنایا جائے گا تاکہ قیدی جیل سے باہر جاکر جرائم کرنے کے بجائے معاشرے کے اچھے شہر ی بنیں*

Share Button
loading...
loading...

About M. MAZHAR RASHEED Ch.Abd-ul-Rasheed

loading...
Scroll To Top