شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / ضلع قصورپولیس کی 2013کی کارکردگی کی تفصیلات بھی جاری

ضلع قصورپولیس کی 2013کی کارکردگی کی تفصیلات بھی جاری

dpo-kasurقصور(حافظ جاویدالرحمن سے )ڈی پی او قصورجواد قمر نے کہا کہ جرائم کی بیج کنی اورعوام کی جان ومال کے تحفظ کے لیے آئند کوئی کسر اٹھانہ رکھی جائے گی اورگزشتہ سال کی نسبت امن عامہ کے قیام اور سنگین جرائم پر قابو پانے کے لیے بہترین لائحہ عمل تیار کر لیا گیاہے ۔ جس سے سنگین جرائم میں ملوث بیشتر ملزمان پکڑے جا سکے گے بلکہ ان کا قلع قمع بھیکیا جائے گا۔ضلع قصور میں اس سلسلہ میں منظم پولیس پٹرولنگ کے ساتھ ساتھ ٹھیکری پہرے پر بھی خصوصی توجہ دی گئی۔ جس کی وجہ سے ضلع قصور کی عوام اورپولیس کے درمیان اعتماد کا رشتہ بحال ہورہا ہے ۔سنگین مقدمات کی فوری سراغ رسانی اور ان میں ملوث ملزمان کی بروقت گرفتاری اور ان سے مال مسروقہ کی برآمدگی کو یقینی بنانے اور ملزمان کو قرار واقعی سزا دلوانے کے لیے متعلقہ عدالتوں میں قانونی سقم سے پاک چالان پیش کیے جارہے ہیں تاکہ جرائم پیشہ عناصر کوکیفرکردارتک پہنچایا جاسکے اور عوام الناس میں احساس تحفظ پیدا ہو۔وہ گزشتہ روزڈی پی او آفس قصور میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کر رہے تھے۔اس موقع پر انہوں نے ضلع قصور پولیس کی 2013کی کارکردگی کی تفصیلات بھی جاری کیں جس کے مطابق قصور پولیس نے جرائم پیشہ عناصر کے خلاف خصوصی کاروائی میں گزشتہ سال کے 12ماہ کے دوران سنگین جرائم میں ملوث118گروہوں کا قلع قمع کرکے انتہائی خطرناک430ملزمان کو گرفتارکیا گیا اورمجموعی طورپر5 کروڑروپے سے زائدمالیت کی برآمدگی کے علاوہ ان کے قبضہ سے استعمال ہونا والا اسلحہ بھی برآمدکیا گیا۔مجرمان اشتہاری ،ناجائز اسلحہ اورمنشیات کے بارے میں پوچھے گئے سوالات کے بارے میں ڈی پی او قصورنے بتلایا کہ پولیس نے شرح جرائم پرقابوپانے کے لیے اشتہاری مجرمان کی گرفتاری، ناجائز اسلحہ کی برآمدگی اورمنشیات کے انسدادپر خصوصی توجہ مرتکزکی۔ جس کے نتیجے میں 2812 اشتہاری مجرمان کوگرفتارکیاگیا جوکہ قتل ،اقدام قتل،ڈکیتی ،راہزنی،سرقہ ودیگرمقدمات میں پولیس کو مطلوب تھے ۔اسی طرح سال2013کے دوران1296عدالتی مفروران کو بھی گرفتارکیا گیا۔قصور پولیس نے ناجائز اسلحہ کے خلاف چلائی جانے والی خصوصی مہم کے دوران1742مقدمات درج کرکے1750ملزمان کو گرفتارکیا اوران کے قبضہ سے21کلاشنکوفیں ،105رائفلیں ،314بندوقیں ،1302پستول /ریولورزاوردیگر اسلحہ برآمدکیا۔ اسی طرح منشیات فروشوں کے خلاف کاروائی کے دوران1275مقدمات درج کرکے ملزمان کے قبضہ سے28کلو ہیروئن ،230کلو چرس ،4کلوافیون اور15585 شراب کی بوتلیں بھی برآمدکی گئیں اور1306ملزمان کو چالان عدالت کیا گیا ڈی پی او قصور جواد قمر نے کرائم کی تفصیلات بتا تے ہوئے کہا کہ ضلع قصور میں سال2013میں کل13595مقدمات درج ہوئے جن میں سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے والے مقدمات بجلی چوری ،گیس چوری اور پانی چوری وغیرہ کے2624 مقدمات بھی شامل ہیں جبکہ سال2012میں کل12821مقدمات درج ہوئے تھے لیکن ان میں سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے والے مقدمات کی تعداد بہت کم تھی اس طرح مجموعی طورپرضلع قصور میں کرائم میں واضح کمی رہی اور قصور پولیس نے سرکاری املاک کے نقصان کو روکنے میں بھی اہم کردار ادا کیا ۔سنگین جرائم کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے ڈی پی او قصورجواد قمر نے کہا کہ سا ل2013کے دوران اندھے قتل کے47مقدمات ،ڈکیتی /برابری معہ بلائنڈ مرڈرکے10مقدمات، ڈکیتی کے213مقدمات ، رابری کے 436مقدمات،اغواء برائے تاوان کے1مقدمات ،زنابالجبر کے91مقدمات جبکہ وہیکل چھیننے کے233مقدمات کل1031 درج ہوئے جن میں سے700مقدمات کے چالان عدالت میں بھجوائے گئے اور مجموعی طورپر18کروڑروپے کی مالیت کا مال مسروقہ نقدی ،طلائی زیورات گاڑیاں ،موٹرسائیکلز اورمویشی برآمد کرکے اصل مالکان کے حوالے کیے گئے ۔ جبکہ سال 2012میں کل1203سنگین مقدمات درج ہوئے تھے اس طر ح مجموعی طور پر سنگین جرائم میں بھی واضح کمی رہی ضلع قصورمیں پولیس مقابلوں کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سال کے دوران کل7پولیس مقابلے ہوئے۔ جن میں 1پولیس ملازم شہادت کے رتبہ پر فائزہوا اور6جرائم پیشہ افراداپنے انجام کو پہنچے اور17کو زندہ گرفتارکیا گیا۔سکیورٹی کے حوالہ سے کیے گئے ایک سوال کے جواب میں ڈی پی او قصور نے کہا کہ دونوں عیدوں اورمحرم الحرام کے موقعہ پرسکیورٹی کے ٹھوس اقدامات کیے گئے تھے اوراس مقصدکے لیے معاشرہ کے تمام طبقات بالخصوص علمائے کرام ،ممبران مصالحتی وامن کمیٹی ،انجمنِ تاجران اورصحافیوں کے ساتھ قریبی تعلقات استوارکیے گئے تھے جس کی وجہ سے رواں سال کے دوران ضلع بھر میں دہشت گردی کا کوئی واقعہ رونمانہ ہوا۔نیز امن اورمحلہ کمیٹیوں کے باقاعدگی کے ساتھ اجلاس منعقد کیے گئے ۔مساجد،امام بارگاہوں اوراقلیتی عبادت گاہوں کی حفاظت پرخصوصی توجہ دی گئی اوراس سلسلہ میں متعلقہ انتظامیہ کی مشاورت اورعملی تعاون حاصل کیا گیا۔انہوں نے کہاکہ خطرناک اشتہاریوں کی گرفتاری کویقینی بنانے کے ساتھ ساتھ مشتبہ افرادکی سرگرمیوں پرکڑی نظررکھی جارہی ہے اوراس سلسلہ میں کمیونٹی پولیسنگ کے تحت نیبرہیڈواچ پرمبنی لائحہ عمل اختیار کیا گیاہے ڈی پی او قصور جواد قمر نے مزید کہا کہ سال 2014کے دوران جرائم کے سدِباب ،مجرمان کی گرفتاری اورمنشیات کی روک تھام کے لیے نتیجہ خیز انتظامات کیے جائیں گے شہری علاقوں میں چوکیدارہ سسٹم ،مارکیٹوں اوربازاروں میں CCTVکیمرے جبکہ دیہاتی علاقوں کے ٹھیکری پہرہ کے ذریعہ جر
ائم کی روک تھام میں مددلی جائے گی۔،عوامی شکایات کے ازالہ کے لیے ضلع کی سطح پر شکایات سیل کو ازسرنومرتب کیا جائے گا تاکہ کم سے کم وقت میں عوامی شکایات کا ازالہ کیا جاسکے ۔آخر میں اجتماعی دعا کی گئی کہ اللہ تعالیٰ 2014میں اپنی برکتوں کی نزول کے ساتھ پورے ملک کو حفظ وامان میں رکھے اورہمیں حالات سے نمٹنے کی توفیق عطا فرمائے۔

یہ بھی پڑھیں  حکومت کے ایک ہی دن میں 2 ڈرون حملوں نے زراعت اور صنعت کا بوریا بستر گول کر دیا،صدر کسان بورڈ