شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / بین الاقوامی / لوک سبھا الیکشن: مسلمان پارلیمنڑینز کی تعداد میں کمی

لوک سبھا الیکشن: مسلمان پارلیمنڑینز کی تعداد میں کمی

نئی دہلی(ڈیسک نیوز)بھارتی الیکشن کے نتائج نے سیکولر ازم کا بت پاش پاش کردیا ہے،حالیہ الیکشن میں صرف ستائیس مسلمان پارلیمنٹ میں پہنچ پائے،بی جے پی نےچھ مسلمانوں کو ٹکٹ دیا، ایک بھی کامیاب نہ ہوسکا ۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق انڈیا کے پارلیمانی انتخابات میں مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کی مخالف ہندو انتہا پسند بی جے پی نے جن چھ مسلمانوں کو اپنا امیدوار بنایا ان میں سے بھی کوئی ایک کامیاب نہیں ہو سکا،نو منتخب مسلم اراکین میں سے صرف دو خواتین ہیں۔مغربی بنگال سے گذشتہ الیکشن میں آٹھ مسلمان منتخب ہو ئے لیکن اس بار صرف چار مسلمان ہی لوک سبھا پہنچ پائے جن میں نصرت جہاں روحی سمیت دو خواتین بھی شامل ہیں۔بہار میں صرف دو مسلم امیدوار کامیاب ہو سکے، کیرالہ اور شمال مشرقی ریاست آسام میں بھی مسلم نمائندگی میں کمی آئی۔آل انڈیا یونائٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ کے سربراہ بدرالدین اجمل آسام سے کامیاب ہو گئے،تاہم اتر پردیش میں صورتحال مختلف رہی اور یہاں گزشتہ الیکشن کی نسبت اس بار سب سے زیادہ چھ مسلمان منتخب ہوگئے معروف مسلم رہنما اور مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی تلنگانہ میں کامیاب رہے

یہ بھی پڑھیں  عاشق رسولﷺ امام احمدرضاخان الشاہ بریلوی
error: Content is Protected!!