تازہ ترینعلاقائی

پھولنگر:میڈیکل سٹوروں پرنشہ آور ٹیکوں، شربتوں کی کھلے عام فروخت جاری

phool-negarبھائی پھیرو(نامہ نگار) سرائے مغل اور گردونواح میں میڈیکل سٹوروں پرنشہ آور ٹیکوں،گولیوں،شربتوں اور دونمبرادویات کی کھلے عام فروخت ۔نئی نسل تباہ ،محکمہ صحت خاموش تماشائی ۔فروخت کرنے والے میڈیکل سٹوروں کے ککھ پتی مالکان کروڑ پتی بن گئے ۔عوامی و سماجی حلقوں کا دونمبر ادویات فروخت کرنے والے میڈیکل سٹوروں اور محکمہ صحت کے کرپٹ افسران کے خلاف فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق سرائے مغل،ہلہ اورگردونواح میں میڈیکل سٹوروں پرنشہ آور ٹیکوں،گولیوں،شربتوں اور دونمبرادویات کی کھلے عام فروخت جاری ہے اور ان نشہ آور ادویات کے استعمال کی وجہ سے نوجوان نسل کے سینکڑوں افراد نشہ کی لت میں مبتلا ہوکر زندہ لاشیں بن چکے ہیں۔عطائی ڈاکٹروں نے یہ گھناؤنا کاروبار سر عام کیا ہوا ہے اور یہ کاروبار اتنا منافع بخش ہے کہ ککھ پتی لوگ اس کاروبار سے کروڑ پتی بن چکے ہیں،اور جگہ جگہ عطائی ڈاکٹروں کی دوکانیں کھمبیوں کی طرح اگ آئی ہیں۔یہ کاروبار محکمہ صحت کے افسراں کی ملی بھگت سے ہوتا ہے اور اس کیلیے ہر ماہ لاکھوں روپے کی منتھلیاں مجاز افسراں کی جیبوں میں جاتی ہیں اور یہ افسران ان موت کے سوداگروں کو کھلی چٹھی دیکر نئی نسل کی تباہی کا نظارہ کرتے ہیں۔بعض عطائی ڈاکٹروں نے ایک لمبے عرصہ سے اپنے کلینکوں کے باہر بڑے،بڑے بورڈ آویزاں کر رکھے ہیں جن پر پروفیسر و ایم بی بی ایس ڈاکٹروں کے نام لکھے ہوئے ہیں اور وہ دو نمبر سے لیکر چار نمبر تک کی ادویات کھلے دھڑلے سے فروخت کر رہے ہیں۔سماجی رہنما عبدالناصر ،رحمت اللہ اورعوامی و سماجی حلقوں کا دونمبر ادویات فروخت کرنے والے میڈیکل سٹوروں اور محکمہ صحت کے کرپٹ افسران کے خلاف فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button