شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / پھولوں نے بھی شعلے اگلے ہیں ۔۔اک برق پہ ہی الزام نہیں

پھولوں نے بھی شعلے اگلے ہیں ۔۔اک برق پہ ہی الزام نہیں

کر ا چی میں موت کا رقص مسلسل جا ری و سا ری ہے۔خون کی ہو لی کھیلنے پر کوئی پا پندی نہیں رہی۔شہر کا کو چہ کو چہ خون میں نہا رہا ہے۔قا ئد کے شہر میں لا شیں گر رہی ہیں ٹا ر گٹ کلنگ کا سلسہ ابھی تک نہیں رک سکا۔گز شتہ روز بھا ری اسلحہ کا استعمال بے دردی سے کیا گیا۔دستی بمبوں ارو را کٹوںکی با رش ہو تی رہی۔اور شہر ی خون میں نہا تے ر ہے ہر طر ف آہوں اور سسکیوں میں ڈو بے عوام احتجا ج کر تے ہو ئے نظر آ ئے کھارادار میں ہو ٹل پر فا ئر نگ کے نتیجے میںسا بق ایم۔این۔اے اور پیپلز پا رٹی کے را ہنما راجہ کر یم داد بلوچ سمیت 15افراد جان بحق ہو گئے جب کہ 16زخمی ہو ئے۔را جہ کر یم داددوستوں کے ہمراہ افطار کے لیے ہو ٹل میں بیٹھے تھے۔مسلح افراد کی فائر نگ سے اللہ کو پیا رے ہو گئے۔جب کہ دو سر ی جا نب بدا منی اور تشدد کا سلسلہ جا ری رہا اور دو افر اد کو گولیوں سے بھون دیا گیا۔اخبا ری رپوٹ کے مطا بق گز شتہ روز 17افراد جان بحق اور 13زخمی ہو ئے ۔جس میں دو تا جر بھی شا مل ہیںزخمی ہو نے والوں میں8تا جروں کا ذکر ہو ا ہے۔کر ا چی میدان جنگ کا روپ دھا ر چکا ہے۔لگتا ہے یہاں طا غو تی قو تیں گر یٹ گیم کھلنے میں مصر و ف ہیں اور اس میں میر جعفروں اور میر قاسموں کا بھی حصہ بمطا بق جثہ نظر آ رہا ہے۔یہاں پھولوں نے بھی شعلے اگلے ہیں۔اک بر ق پہ ہی الزام نہیں حکمر ان بے حس نظر آ رہے ہیں۔جمہو ری دور میں افر اتفر ی انتشا ر و افترا ق،قتل و غارت گر ی اور مو ت کا رقص حیران کن امر ہے۔تبصرہ نگا روں کا کہنا ہے کہ کر ا چی اقتدا ر کی آ گ میںجل ر ہا ہے۔ایم۔کیو ایم،اے این پی اور پی پی کے درمیان حکمر انی کی خونی جنگ ہو رہی ہے۔جبکہ بعض تجزیہ نگا روں کا کہنا ہے۔کہ یہاں امر یکہ کی گر یٹ گیم کھیلی جا رہی۔بھارت اسر ائیل اور بر طا نیہ کی حساس ایجنسیاں کما ل مہارت دکھا ر ہی ہیں۔ریمنڈ ڈیو س کی گر فتا ری کا غصہ نکا لا جا رہا ہے۔
بہت سی ملکی اور غیر ملکی میڈیائی ایجنسیوں کی رپو ر ٹس پڑ ھنے کو ملتی ہیں جن میں اس امر کا ذکر ہو تا ہے کہ کر ا چی اور بلوچستان میں غیر ملکی قو تیں بر سر پیکا ر ہیں۔پا کستان کو ٹکڑے ٹکڑے کیے جا نے کی سا ز شیں سائنٹفک طر یقے سے کی جا رہی ہیں۔اور اس بھونڈے کھیل میں ہما رے سیاسی کھلا ڑی بھی اپنا فن دکھا رہے ہیں۔یہ بھی خبر ہے کہ امر یکی صدر اوباما کو پاکستانی ایٹمی اثا ثے قبضہ میں لینے کے لیے اکسایا جا رہا ہے۔اور پا کستان کے قبائلی علاقوں میں نا دیدہ قو تیں چین کے صو بہ سکسیانگ میں تخر یب کاری اور قتل و غارت گری کے لیے جہادیوں کو تربیت کی فر اہمی کے لیے منظم کو ششیں کر رہی ہیں۔ان نا دیدہ قو توں کے با رے میں انکشا ف ہو ا ہے کہ ریمنڈ ڈیوس کے شتو نگڑے ملوث ہیں تاکہ چین کو یہ با ور کر ایا جا سکے کہ پا کستان ایک دہشت گرد ملک ہے اور اس کے خلاف اقو ام متحدہ میں دہشت گرد ملک ہو نے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرائی جا سکے۔
پی پی کی حکو مت نفسیاتی طو ر پر مردہ اور اخلاقی طو ر پر نا کارہ ہو چکی ہے۔اس کے پاس کوئی ٹھوس پرو گرام نہیں رہا۔جمہو ریت کے پاسبا نوں نے آمر یت کو بھی مات کر دیاہے ۔جمہو ریت بری طر ح پٹ چکی ہے۔اور آ مریت کے مقابلے میں اپنی موت آپ مر چکی ہے۔جو کام آمرانہ دور میںنہیں ہوئے وہ بد قماشیاں جمہوریت کی زینت بن رہی ہیں۔عوام گومگو کی کفیت سے دو چار نظر آتے ہیں انہیں کو ئی ایسا لیڈر نظر نہیں آ رہا جس کے پیچھے وہ لبیک کہہ سکے۔۔۔لگتا ہے اب کو ئی بھٹو نہیں آئے گا۔ما رشل لائ کے آنے کے امکانات بھی معدوم نظر آ تے ہیں۔کیو نکہ ان حا لات میں کوئی جنرل حکو مت پر قبضہ کر نے کی کو شش نہیں کر ے گا اگر کر ے گا تو وہ منہ کی کھائے گا۔کیونکہ ملک ہر لحا ظ سے دیوالیہ پن کا شکار ہے۔اقتصادی اور معاشی طور پر اپنی موت آپ مر رہا ہے۔سیاسی لیڈروں کے پاس وقت نہیں کہ وہ ملک و قوم کی بہتری کے لیے سر جوڑ کر سوچیں انہیں ٹی وی چینلوں پر اپنا غبار نکالنے کے وافر ذرائع حاصل ہو چکے ہیں۔ٹی وی اینکروں کی بھی موج بن گئی ہے وہ مداریوں کی طرح ریچھ اور بندر کے کھیل اور تماشے عوام کو دکھا کر اپنا قد بڑھا رہے ہیں۔ریچھ اور بندر کے درمیان جنگ کا تماشہ بڑا دلچسپ ہوتا ہے۔جسے عوام بہت پسند کرتے ہیں اور مداری کو نہ صرف داد بلکہ پیسے بھی دیتے ہیں۔امریکہ ہمارا تماشہ غور سے دیکھ رہا ہے۔چونکہ اس سارے تماشے کے پیچھے اس کا کمال ہے اور کہہ رہا ہے کہ دنیا والو دیکھ لو پاکستان ایک غیر مستحکم ایٹمی ریاست ہے۔جو کسی وقت بھی دنیا کو اضطرابی کیفیت سے دوچار کر سکتی ہے۔لیکن امریکہ کو کون نہیں جانتاکہ یہ ایک پرانا پاپی ملک ہے جس نے دنیا کو صدیوں سے پریشان کر رکھا ہے اور لاکھوں نہتے لوگوں کا قاتل ہے۔امریکہ یہ بھی جان لے کہ اگر اس نے ہمارے جگر کو پاش پاش کرنے کی جسارت کی تو ہم اس کے گردے بھی فیل کر دیں گے۔اگر اللہ تعالیٰ چیونٹی سے ہاتھی مروا سکتا ہے اور چڑیا سے باز تو پاکستان کے ہاتھوں روس کو مروانے کے بعد امریکہ کو بھی کرچی کرچی کروا سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  ایک اور دھرنا ۔۔۔؟؟؟