تازہ ترینعلاقائی

سانگھڑ میں بھی 10 محرم الحرام انتہائی احترام و عقیدت سے منایا

سانگھڑ(نامہ نگار) سانگھڑ میں بھی 10 محرم الحرام انتھائی احترام و عقیدت سے منایا گیا۔ سانگھڑ کے مختلف شہروں سے جلوسوں کے نکلنے کا سلسلہ شروع ہو ا سانگھڑ ضلع کے چھ تحصیلوں سانگھڑ،سنجھورو،کھپرو۔شہدادپور،ٹنڈوآدم، جام نواز علی میں 150سے زائدامام بارگاہوں سے ماتمی جلوس نکالے گئے جو کہ اپنے اپنے مقررہ راستوں سے ہوتے ہوئے مرکزی امام بارگاہوں میں پہنچے۔ دوران جلوس سینہ کوبی ، زنجیر زنی ، سمیت دیگر روایتی طریقوں سے ماتم کا سلسلہ جاری رہا اس دوران ماتمی جلوس کے تمام روٹس پر سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے تھے شہر کے داخلی و خارجی راستوں کی ناکہ بندی کی گئی جبکہ جلوس میں شر کت کر نے والے افراد کی تلاشی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے  ایس ایس پی محمد علی بلوچ کی ہدایات پر ضلع بھر میں یومِ عاشورہ کے موقع پر سیکورٹی کے سخت انتطا مات دیکھنے میں آئے مساجد ، امام بارگاہوں ، مدارس ، سمیت دیگر عبادت گاہوں پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی اور پولیس کی نگرانی میں بازاروں ، دکانیں اور شاپنگ سینٹروں کو بند کرادیا گیا تھا جبکہ سو ل اسکاؤٹس نے بھی سیکورٹی کے سلسلے میں پولیس کے شانہ بشانہ انتظامات کئے اور انتظامات کو کنٹرول کیا اسکاؤٹس نے زخمی عذاداران کو طبی امدادی سینٹروں تک پہنچایا ماتمی جلوس میں جگہ جگہ مجالس کا بھی سلسلہ جاری رہا۔ماتمی جلوس کے شرکاء نے مجلس میں شرکت کی اور واقع کربلا پر روشنی ڈالی اور امام حسین علیہ اسلام کی قربانی کوراہِ حق میں دینِ اسلام کی کامیابی کیلئے عظیم مثال قراردی۔پولیس اور رینجرز کی جانب سے حفاظتی انتظامات کے پیش نظرگشت کا سلسہ بھی جاری ہے جلوسوں کے مقررہ راستوں کو کلیئر کیا گیا محرم الحرام کے دوران چار سے زائد علاقوں کو حساس قرار دیا گیا ہے جن میں حفاظتی انتظامات مزیدبڑھا دیئے گئے ہیں۔سانگھڑ کے جلوسوں میں الم ۔ذوالجناح اور پھولوں سے سجائے گئے تعزئے شامل تھے جلوسوں میں ہزاروں کی تعداد میں عزادار شریک ہوئے جو کہ شھید کربلا امام حسین کو خراج عقیدت پیش کر تے رہے یوم عاشور کا ماتمی جلوس مقررہ راستوں سے گذر کر بعد از مغرب اختتام پذیر ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں  پی ٹی آئی کا 180 ارکان کی حمایت کا دعویٰ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker