پاکستانتازہ ترین

بائیسویں آئینی ترمیم لانے کا فیصلہ

اسلام آباد(بیورو رپورٹ)حکومت نے 22 ویں آئینی ترمیم لانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس حوالے سے جمعرات کو ایوان صدرمیں پیپلزپارٹی کی کورکمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں دوہری شہریت اورتوہین عدالت کے بارے میں قانون سازی سے متعلق تبادلہ خیال کیاگیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ دوہری شہریت اورتوہین عدالت کے معاملے میں اتحادی جماعتوں اوراپوزیشن سے مشاورت کی جائے گی۔اہم امورپرقانون سازی سے قبل اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ چیف الیکشن کمشنر کی تقرری کاعمل بھی اتفاق رائے سے طے کیا جائے گا۔ پیپلزپارٹی مفاہمت کی پالیسی جاری رکھے گی۔ اجلاس میں بائیسویں ترمیم لانے کا فیصلہ کیاگیاہے۔دوہری شہریت کے حامل شہریوں کوعام انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت کاترمیمی بل قومی اسمبلی کے رواں اجلاس میں پیش جائے گا۔ آئین کے آرٹیکل تیرسٹھ ون سی میں ترمیم کی جائے گی۔نئے بل میں نئی ترمیم کے مطابق دوہری شہریت کے حامل افرادعام انتخابات میں حصہ لینے کے اہل قرارپائیں گے۔ نئے قانون میں اس بات کوبنیاد بنایاگیا ہے کہ دنیا میں کئی ممالک دہری شہریت کے حامل اپنے شہریوں کوانتخابات میں حصہ لینے کی اجازت دیتے ہیں۔ امریکہ اوربرطانیہ میں سولہ ممالک کے ساتھ پاکستان کادوہری شہریت کے بارے مِں معاہد ہ ہے۔ایوان صدر میں صدر زرداری کی جانب سے دیئے گئے عشایئے میں وزیراعظم راجہ پرویز اشرف ، سابق وزیراعظم سیدیوسف رضا گیلانی، فریال تالپور، نذرمحمدگوندل ،مخدوم امین فہیم،چوہدری احمدمختار،مخدوم شہاب الدین، سنیٹررحمان ملک،اور دیگرسینیئر رہنماوٴں نے شرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں  قصور:معمولی نوعیت کےمقدمات میں ملوث 7قیدیوں کو رہاکرنےکےاحکامات جاری

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker