پاکستانتازہ ترین

اسلام آباد:اڈیالہ جیل میں قیدیوں کوموبائل فون دینے والا اہلکارگرفتار

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) محکمہ اینٹی کرپشن کے خصوصی سیل نے اڈیالہ جیل راولپنڈی میں چھاپہ مار کر قیدیوں کو ہزاروں روپے کے عوض موبائل فون فراہم کرنے خطرناک جرم میں ملوث سینئر جیل اہلکار باقر علی کو رنگے ہاتھوں گرفتار کرلیا گیا۔ ابتدائی تحقیقات میں گرفتا جیل اہلکار نے اہم انکشافات کیے ہیں۔ جیل ذرائع اور اینٹی کرپشن حکام کے مطابق باقر علی نے دوران تفتیش بتایا کہ اس نے اب تک بائیس سو قیدیوں اور حوالاتیوں سے پانچ ہزار فی کس وصول کرنے کے بعد انہیں موبائل فون فراہم کیے جس کے ذریعے یہ قیدی نہ صرف جرائم پیشہ عناصر سے رابطے میں ہیں بلکہ بعض قیدی جیل میں بیٹھ کر موبائل فون سے کاروباری شخصیات سے بھتہ بھی وصول کررہے ہیں۔ اینٹی کرپشن کے ذرائع کے مطابق جیل اہلکار باقر علی شاہ نے یہ انکشاف بھی کیا ہے کہ قیدیوں اور حوالاتیوں سے وصول کی گئی رقم کا بڑا حصہ جیل کے اعلی حکام کو بھجوایا جاتا ہے۔ تاہم جیل سپریٹنڈنٹ مشتاق احمد نے اس الزام کا دفاع کرتے ہوئے اسے جیل کے سینئر اہلکار باقر علی کا ذاتی فعل قرار دیتے ہوئے معاملے سے لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ جیل میں روزانہ سرچ آپریشن کیا جاتا ہے۔ دوسری جانب محکمہ اینٹی کرپشن کے چھاپے کے بعد جیل میں بڑا سرچ آپریشن شروع کردیا گیا اور آپریشن کے دوران اب تک قیدیوں اور حوالاتیوں سے درجنوں موبائل فون اور ممنوعہ اشیا برآمد کی گئی ہیں۔ محکمہ اینٹی کرپشن ذرائع کا کہنا ہے کہ گرفتار اہلکار کے بیان پر مقدمہ درج کرنے کے بعد تحقیقات شروع کردی گئی ہیں ۔ اگر ضرورت محسوس کی گئی تو جیل حکام کو بھی شامل تفتیش کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں  ”ہمارے جوان تھک گئے ہیں“لاہور پولیس نے پی ٹی آئی سے ریلی بر وقت ختم کرنے کی درخواست کر دی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker