تازہ ترینفن فنکار

گلوکاراحمد رشدی کو بچھڑے انتیس برس بیت گئے

کراچی (نامہ نگار) پاکستان میں پاپ موسیقی کو متعارف کرانے والے گلوکار احمد رشدی کو ہم سے بچھڑے انتیس برس بیت گئے مگر ان کے گائے ہوئے گیت آج بھی کانوں میں رس گھول رہے ہیں۔ احمد رشدی کو پاکستان اور بھارت میں پاپ موسیقی کا جد امجد مانا جاتا ہے۔ مذہبی گھرانے میں پیدا ہونے والے سید احمد رشدی اداکار بننے نکلے تھے ليکن  کسی کے وہم وگماں میں بھی نہیں تھا کہ وہ  گلوکاربن جائيں گے۔ احمد رشدی نے ريڈيو پاکستان سے اپنے  سفر کا آغاز کيا۔ سادہ سے انداز ميں گايا گيا  گيت  دلوں کو چھو گيا تھا اور احمد رشدی کو بھی فلمی دنيا ميں فن کی گاڑی دوڑانے کا موقع مل گيا۔ والدين سے چھپ کر گانے والے احمد رشدی نے اپنے وقت کے نامور موسيقاروں کے ساتھ کام کيا اور 25 الوں ميں 5 ہزار گيت گائے۔احمد رشدی کی شوخ آوازسے سجے  طربيہ گيت  پاکستانی موسيقی کا ايک عہد مانے جاتے ہيں۔ فلمی دنيا کی روايتی بے حسی نے بڑے بڑے نامور ستاروں کو گوشہ نشينی پر مجبور کيا احمد رشدی بھی اس بے اعتنائی کے جھٹکے سے سنبھل نہ سکے اور دل پر ناقدری  کا بوجھ ليے  48سال کی عمر ميں رنگ و بو کی اس دنيا سے رخصت ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں  لاہور: قوم افواج پاکستان کے ساتھ ہے ،دہشتگردی کے خاتمے کیلئے بہت قربانیاں دیں ،سیدعرفان احمد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker