پاکستانتازہ ترین

سوئس فیصلہ عدلیہ کی بے توقیری،میرے مؤقف کی حمایت ہے،اعتزاز احسن

aitzaz ahsanلاہور(نامہ نگار)بیرسٹر چوہدری اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ سوئس حکام کے فیصلے سے عدلیہ کی بے توقیری ہوئی ہے،سپریم کورٹ نے سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو سزا دے کر زیادتی کی ہے،لاہور میں صدر آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری سے ملاقات کے بعد انہوں نے کہا کہ سوئس حکام کے جواب سے ان کا مؤقف درست ثابت ہوا ہے،صدر کو بین الاقوامی قوانین کے مطابق استثنیٰ حاصل ہے،سوئس حکام کو خط نہیں لکھا جاسکتا تھا،عدالت بضد تھی،انہوں نے کہا کہ خط نہ لکھنے کی پاداش میں یوسف رضا گیلانی کو پہلے سزا اور پھر قومی اسمبلی کی نشست سے نااہل قرار دیدیا گیا،عدالت نے ایک وزیراعظم کو سزا دے کر زیادتی کی،انہوں نے کہا کہ سوئس حکام کو وہ خط لکھا گیا جس کی عبارت سپریم کورٹ نے منظوری کی تھی،اس لحاظ سے یہ خط عدلیہ کی جانب سے لکھا گیا،جس سے عدلیہ کا وقار مجروح ہوا،انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کو چاہئے کہ یوسف رضا گیلانی کی نااہلی کے حوالے سے از خود نوٹس لے،اعتزاز احسن نے کہا کہ انہیں ایک کیس میں چیف جسٹس نے اپنی عدالت میں طلب کیا،حالانکہ وہ سپریم جوڈیشل کونسل اور ان کی بحالی کے کیس میں ان کے وکیل رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ اگر ایسی مثال قائم کی گئی کہ ایک سائل کے سامنے اس کا وکیل پیش ہو کر وکالت کرے تو عدالتوں میں دکانداریاں لگ جائیں گی اور ہر قسم کے وکیل ججز کے سامنے پیش ہوں گے

یہ بھی پڑھیں  ایان علی کا نام ای سی ایل سے خارج کردیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker