پاکستانتازہ ترین

شاعرمشرق اورمفکرپاکستان علامہ محمد اقبال کا 135یوم ولادت آج منایاجارہاہے

علامہ محمد اقبال نو نومبر اٹھا رہ سو ستتر کو سیالکوٹ میں شیخ نور محمد کے گھر پیدا ہوئے۔ انہوں نے مشن ہائی سکول سیالکوٹ سے میٹرک اور مرے کالج سیالکوٹ سے ایف اے کا امتحان پاس کیا۔۔۔ زمانہ طالب علمی میں انہیں میر حسن جیسے استاد ملے، انہی کی رہنمائی میں انہیں شعر و شاعری کا شوق پیدا ہوا۔۔۔ گورنمنٹ کالج لاہور سے بی اے اور ایم اےکیا۔۔۔ یہاں آپ کو پروفیسرآرنلڈ جیسے فاضل شفیق استاد ملے۔۔۔ انیس سو پانچ میں علامہ اقبال اعلیٰ تعلیم کے لیے انگلستان چلے گئے اور کیمبرج یونیورسٹی میں داخلہ لےکرپروفیسر براؤن جیسے فاضل اساتذہ سے رہنمائی حاصل کی۔۔۔ بعد میں آپ جرمنی گئے جہاں میونخ یونیورسٹی سے آپ نے فلسفہ میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔۔۔ وکالت کے ساتھ ساتھ آپ شعروشاعری بھی کرتے رہے اور سیاسی تحریکوں میں بھرپور انداز میں حصہ لیا۔۔۔ انیس سو بائیس میں حکومت کی طرف سے انہیں سر کا خطاب ملا۔۔۔ انیس سو چھبیس میں آپ پنجاب لیجسلیٹو اسمبلی کے ممبر چنے گئے۔۔۔ آپ آزادی وطن کے علمبردار تھے اور باقاعدہ سیاسی تحریکوں میں حصہ لیتے تھے۔۔۔ مسلم لیگ میں شامل ہوکر آل انڈیا مسلم لیگ کے صدر منتخب ہوئے۔۔۔ آپ کا الہٰ آباد کا مشہور صدارتی خطبہ تاریخی حیثیت رکھتا ہے، جس میں آپ نے پاکستان کا تصور پیش کیا۔۔۔ انیس سو اکتیس میں گول میز کانفرنس میں شرکت کرکے مسلمانوں کی نمائندگی کی۔۔۔ علامہ اقبال اور قائداعظم کی ان تھک کوششوں سے ملک آزاد ہوگیا اور پاکستان معرض وجود میں آیا ۔۔۔ پاکستان کی آزادی سے پہلے ہی اکیس اپریل انیس سو اڑتیس میں علامہ انتقال کر گئے تھے۔۔۔ لیکن ایک عظیم شاعر اور مفکر کے طور پرقوم ہمیشہ ان کی احسان مند رہے گی۔

یہ بھی پڑھیں  پنجاب حکومت کا مال روڈ پر اپوزیشن کو دھرنے کی اجازت دینے سے انکار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker