پاکستانتازہ ترین

سپریم کورٹ نے الطاف حسین کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) سپریم کورٹ نے ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کو جلسے میں عدلیہ مخالف تقریر کرنے پرتوہین عدالت کا نوٹس جاری کرتے ہوئے سات جنوری کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔ عدالتی حکم میں کہا گیا ہے کہ الطاف حسین نے قابل احترام ججز کے بارے میں نامناسب الفاظ استعمال کیے جو توہین عدالت کے ذمرے میں آتاہے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے کراچی بد امنی کیس میں عدالتی فیصلے پر عمل درآمد کیلئے دائردرخواست پر سماعت کی۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین نے ایک جلسے سے خطاب کے دوران جو تقریر کی، اس معاملے کو بھی دیکھیں گے۔ وہ یہ چاہتے ہیں کہ عدالت اپنا کام نہ کرے؟ الطاف حسین کی جلسے میں ججز سے متعلق تقریر میں استعمال کیے گئے الفاظ توہین عدالت کے زمرے میں آتے ہیں۔ وہ عدالت میں پیش ہوکراس کی وضاحت کریں۔ عدالت نے پیمرا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ججز کے بارے میں نازیبا الفاظ کا متن اور تحریری مواد بھی طلب کر لیا ہے۔ عدالتی حکم میں کہا گیا ہے کہ پی ٹی اے ٹیلی فونک خطاب کی اپ لنکنگ سہولت دیتا ہے جس کا غلط استعمال کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں  کہاں گئی سونامی ؟

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker