پاکستانتازہ ترین

امریکہ سلالہ حملے کیخلاف پارلیمنٹ کی سفارشات کا احترام کرے ، صدرمملکت

اسلام آباد﴿بیورو رپورٹ﴾ صدر مملکت آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ امریکہ کو سلالہ حملے کیخلاف پارلیمنٹ کی سفارشات کا احترام کرنا ہوگا ، پاک امریکہ تعلقات جمہوری طریقہ اختیار کئے بغیر آگے نہیں بڑھ سکتے ، ڈرون حملوں کا متبادل تلاش شروع کرنے کیلئے فریم ورک بنایا جائے ، ڈرون حملے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے مشکلات میں اضافہ کررہے ہیں جبکہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں کامیابی کیلئے اعتماد کی بحالی لازی ہے ۔ اس امر کا اظہار انہوں نے جمعہ کو پاکستان اور افغانستان کیلئے امریکہ کے نمائندہ خصوصی مارک گراسمین سے ایوان صدر میں ہونے والی ملاقات کے دوران کیا جس میں پاک امریکہ تعلقات دہشتگردی کیخلاف جنگ ، قومی سلامتی کے حوالے سے پارلیمنٹ کی قرارداد ، پاک امریکہ تعلقات کی بحالی سمیت دیگر امور پر غور کیا گیا ۔ ملاقات میں پاکستان میں متعین امریکی سفیر کیمرون منٹر ، وزیر دفاع چوہدری احمد مختار ، وزیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ ، وزیر خارجہ حنا ربانی کھر ،وزیر داخلہ سینیٹر رحمن ملک ، صدر کے سیکرٹری جنرل سلمان فاروقی ، آرمی چیف جنرل اشفاق پرویز کیانی ، امریکہ میں متعین پاکستانی سفیر شیری رحمان ، سیکرٹری خارجہ جلیل عباس جیلانی ، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل ظہیر الاسلام سمیت دیگر حکام موجود تھے ۔ صدر زرداری نے کہا کہ پاکستان عالمی برادری کے ساتھ اپنے بہتر تعلقات کا خواہاں ہے اور وہ اپنی سرزمین کسی دوسرے ملک کیخلاف استعمال نہیں ہونے دے گا انہوں نے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کے تعلقات کیلئے جمہوری طریقہ اختیار کیاجائے جبکہ انسداد دہشتگردی کیلئے دونوں ملکوں کے مابین جاری تعاون کے میکنزم کو بھی بہتر بنایا جائے کیونکہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں اعتماد کی بحالی ناگزیر ہے ۔ صدر نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں امن کا خواہاں ہے اور افغانستان میں عالمی برادری کی معاونت کو جاری رکھا جائے گا جبکہ پائیدار اور مستحکم افغانستان نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے کے مفاد میں ہے صدر نے کہا کہ ڈرون حملوں نے ہمیشہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں مثبت پیش رفت کو متاثر کیا ہے اور ڈرون حملوں سے عام شہریوں کی ہلاکت سے عوام میں اشتعال بڑھ رہا ہے جسے امریکہ فوری طور پر روکے جبکہ ڈرون حملوں کا متبادل تلاش کرنے کیلئے فریم ورک تشکیل دیاجائے ۔ صدر زرداری نے مزید کہا کہ پاکستان امریکہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو پارلیمانی کمیٹی برائے قومی سلامتی کی سفارشات کی روشنی میں آگے بڑھانا چاہتا ہے اور امریکہ کو سلالہ حملے کیخلاف پاکستان کی پارلیمنٹ کی سفارشات کا احترام کرنا ہوگا انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان اپنا ذمہ دارانہ کردار ادا کررہا ہے انہوں نے کہا کہ نیٹو سپلائی لائن کی بحالی کیلئے ایک طریقہ کار مرتب کردیا گیا ہے جس پر ہی عملدرآمد کیاجائے گا جبکہ امریکہ کولیشن سپورٹ فنڈ کو جلد جاری کرنے کیلئے اقدامات کرے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں توانائی کی پیداوار انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ واٹر مینجمنٹ سمیت سماجی اور انسانی ترقی کے شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع موجود ہیں ملاقات کے دوران امریکی نمائندے مارک گراسمین نے کہا کہ امریکہ پاکستان کی پارلیمانی کمیٹی کی سفارشات کا احترام کرتا ہے اور امریکہ پرامید ہے کہ باہمی تعلقات کو جلد بہتر بنایا جائے گا

یہ بھی پڑھیں  کرکٹ ٹیم کل ڈھاکا روانہ ہوگی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker