تازہ ترینسیّد ظفر علی شاہ ساغرؔکالم

امریکہ کا بیان دھرناختم کرنے کا جوازبن گیا

zafar ali shah logoاخبارات نے 7دسمبرکو نجی ٹی وی کی ایک خبرکاحوالہ دیتے ہوئے رپورٹ شائع کی ہے جس کے مطابق تحریک انصاف اور اس کے دیگر اتحادیوں نے ڈرون حملوں کے خلاف بطوراحتجاج نیٹوسپلائی لائن روکنے کے لئے جاری دھرنے ختم کرنے کا فیصلہ کرلیاہے مذکورہ رپورٹ کی تفصیل کچھ یوں تھی کہ ڈرون حملوں سے متعلق امریکی بیان کے بعد تحریک انصاف اوراس کے دیگر اتحادی جماعتوں نے نیٹوسپلائی لائن روکنے کے لئے دیاگیادھرناختم کرنے کا فیصلہ کرلیاہے اور اس پر تمام اتحادی جماعتیں متفق ہیں۔دھرنے کے خاتمے کے لئے سفارشات تیارکرلی گئی ہیں جس کی حتمی منظوری کے بعد اگلے ایک دوروزمیں دھرناختم کرنے کااعلان متوقع ہے۔رپورٹ مذکورہ میں امریکی بیان کا ذکر آیالیکن تفصیل موجود نہیں جوکہ دینی چاہیے تھی کیونکہ جن لوگوں نے امریکی بیان کو پڑھانہ سناہووہ اس رپورٹ کو سننے اور پڑھنے پر یہ تاثر ذہن میں لائیں گے کہ شائد امریکہ نے تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں کی منت سماجت کی ہے یاانہیں دھمکی آمیز لہجے میں (جیساکہ امریکہ کرتارہتاہے) خبردار کیا ہے کہ دھرناختم کیاجائے ورنہ اچھانہیں ہوگا۔حالانکہ ایسا کچھ بھی نہیں ہے نہ تودھرناختم کرانے کے لئے امریکہ نے تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں کی کوئی منت سماجت کی ہے اور نہ ہی نتائج کی دھمکی دی ہے بلکہ امریکی بیان کا ذکر درحقیقت اس بیان کی نشاندہی ہے جس میں امریکہ نے دھرنوں کے پیش نظرطورخم کے راستے نیٹوسپلائی بند کرنے کا کہا ہے اور امریکہ کی جانب سے دیئے گئے ایسے بیان کے بعد اگر تحریک انصاف اور اس کے اتحادی دھرناختم کرنے کافیصلہ کرتے ہیں تو حق بجانب ہیں کیونکہ جس راستے سے سپلائی ہونہیں رہی وہاں دھرنادینے کاجوازکوئی نہیں بنتا۔ادھرتحریک انصاف کے صوبائی صدراعظم خان سواتی کا کہنایہ ہے کہ اگر وفاقی حکومت نے ڈرون حملے نہ رکوائے تونوازشریف پرڈرون حملہ کریں گے۔تحریک انصاف کے دھرنوں کے باعث امریکہ نے گھٹنے ٹیک دیئے اور طورخم کے راستے سے نیٹوسپلائی بند کرنے کا اعلان کیاجوپارٹی کا ایک عظیم کارنامہ ہے۔دوسری جانب تحریک انصاف خیبر ایجنسی کے کارکنان نے ڈرون حملوں اور نیٹوسپلائی کے خلاف جمعہ کے روزپشاور میں حیات آباد ٹول پلازہ پر احتجاجی مظاہرہ کیاان کے مطابق امریکہ نے پاکستان پر غیراعلانیہ جنگ مسلط کی ہے جس میں اب تک ہزاروں بے گناہ شہری لقمہء اجل بنے ہیں جبکہ ہزاروں معذور ہوچکے ہیں مگراس صورتحال کے باوجود ہمارے حکمران امریکہ کی اس جنگ کو اپنی جنگ سمجھ رہے ہیں۔اگرچہ یہ ایک الگ بحث ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ امریکہ کی ہے یاپاکستان کی تاہم ڈرون حملوں کے خلاف احتجاج اور نیٹوسپلائی لائن روکنے کے لئے دھرنے دے کر تحریک انصاف نے ظلم جبراور ناانصافی کے خلاف آوازبلند کی ہے اور اُن کی آواز نہ صرف اقوام عالم تک پہنچی بلکہ اس کوبڑی حدتک پذیرائی بھی ملی۔تحریک انصاف کے طرزاحتجاج اور طریقہ کار سے اختلاف کیاجاسکتاہے لیکن ڈرون حملے نہ ہو اور ڈرون حملوں کی صورت میں نیٹو سپلائی روک دی جائے یہ خواہش ہر شہری کی ہے۔سو اس کے باوجود کہ تحریک انصاف سالوں سے ڈرون حملوں کے خلاف احتجاج کرتی چلی آئی ہے اور عام انتخابات میں عمران خان کا نعرہ،دعویٰ اور وعدہ بھی یہی تھا کہ اگر ان کی جماعت برسراقتدار آئی تو وہ ڈرون حملوں کے خلاف اقدامات اٹھائیں گے عمران خان اور ان کی جماعت کو ڈرون حملوں کے خلاف احتجاج اور نیٹوسپلائی لائن روکنے کے لئے دھرنادینے کاکریڈٹ نہ دینا زیادتی والی بات ہوگی کہ انہوں نے کم ازکم احتجاج کی حد تک تو اپنا وعدہ پوراکرلیاہے حالانکہ حکومتی عہدیداروں سے لے کرجمعیت علماء اسلام جیسی مذہبی جماعتوں نے بھی ان کے اس اقدام کی مخالفت کی اور بدستورکربھی رہے ہیں جبکہ اگر دیکھا جائے تو ایسے وعدے اور دعوے وزیراعظم نوازشریف اور ان کی جماعت مسلم لیگ نون نے بھی کئے تھے مگر ان کے وعدوں کا کیا حال ہے یہ بھی کسی سے ڈھکاچھپانہیں۔اب جبکہ امریکہ نے طورخم کے راستے سپلائی بند کرنے کا بیان دیاہے جس پر موصولہ اطلاعات کے مطابق تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں نے دھرناختم کرنے کا فیصلہ کرلیاہے اوریہ بھی کہ امریکی بیان کے بعد ایسے دھرنوں کی کوئی ضرورت ہے نہ ہی کوئی جواز ۔ ۔ اگر امریکہ اپنے دیئے گئے بیان پرقائم رہتے ہوئے طورخم کے راستے واقعی سپلائی بندکرتاہے تو ایسی صورت میں نیٹوسپلائی لائن روکنے کے لئے احتجاجی دھرنوں کا تسلسل برقرار رکھناحماقت،وقت کے ضیاع یاپھر عوام کو بے وقوف بنانے کے سواء کچھ نہیں ہوگا۔اس تمام تر صورتحال کے تناظر میں اگرچہ دھرناختم کرنے میں ہی عافیت ہے اس کے باوجودسوال اٹھتاہے کہ کیاتحریک انصاف دھرنے دیتی تھک چکی ہے ، کیا دھرناختم کرنے کے لئے تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں کے لئے جوازچاہیئے تھا جوامریکی بیان نے فراہم کردیا،یہ بھی کہ وسائل کا حامل امریکہ طورخم کے راستے سپلائی بند کرکے کسی اور راستے کو ڈھونڈنکالے گی لیکن تحریک انصاف نے اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر جو دھرنے دیئے کیا اس کے اثرات ملک وقوم کے مفادمیںآئیں گے یایہ ایک لاحاصل کوشش تھی جس کا مقصدسیاسی فوائد حاصل کرنے کے سواء کچھ نہیں تھا اور کیا یہ سب کچھ درحقیقت وفاقی حکومت کے لئے مشکلات پیداکرنے کے لئے کیاگیاجیساکہ ان کے مخالفین الزام عائدکر ر ہے ہیں، سوال یہ بھی اہم ہے کہ امریکہ کی جانب سے طورخم کے راستے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button