پاکستانتازہ ترین

کل جماعتی امن کانفرنس کا اعلامیہ جاری

asfandwali-14-2_lپشاور(نمائندہ خصوصی) عوامی نیشنل پارٹی کے زیراہتمام دہشتگردی کے خاتمے اورامن کی بحالی کیلئے اسلام آباد میں بلائی گئی کل جماعتی امن کانفرنس کے شرکاء نے اس بات پراتفاق کیا ہے کہ ملک میں دہشتگردی کے خاتمے کیلئے متفقہ لائحہ عمل اختیارکیا جائے۔ کانفرنس کے اختتام پرجاری اعلامیہ سناتے ہوئے اے این پی کے صدرآسفند یارولی خان نے کہا کہ دہشتگردی کے مسئلے کے پرامن حل کیلئے آئین اورقانون اورملک کی سلامتی ہونا چاہے۔ ان کہنا تھاکہ مزاکرات کے زریعے امن کے قیام کو اولین ترجیح دی جائے۔ اعلامیہ میں کہاگیا ہے کہ فاٹا میں قبائلی جرگے کی کوششیں قابل قدرہیں اورفاٹا کے نمائندوں کی حمایت کی یقین دھانی کرائی گئی۔ اعلامیہ میں دہشتگردی میں شہید ہونےوالے کے لواحقین کوامدادی پیکیج دینے کامطالبہ کیا گیا اورمتاثرین کوواپس گھروں میں لانے کے انتظامات پرغورکیا گیا۔ اسفند یارولی خان نے کہا کہ دہشتگردی کے مسئلے کا حل الیکشن نہیں سیاسی جماعتیں مشاورت کے بعد اپنی اپنی سفارشات لائیں۔ انھوں نے کہا کہ آج کی کانفرنس نے ثابت کردیا کہ سیاسی جماعتیں ذاتی اختلافات سے بالاتر ہوکردہشتگردی کیخلاف یک جا ہوئی ہیں۔ اعلامیے پرتمام سیاسی جماعتوں نے دستخط کئے ہیں۔  اسفند یارولی خان نے کہا کہ دہشتگردی کایہ مسئلہ الیکشن سے حل ہونے والا نہیں۔ انھوں نے کہا کہ اس اعلامیے کی اہمیت پارلیمنٹ کی قراردادوں سے بھی زیادہ ہے۔ کیونکہ یہاں پارلیمنٹ سے باہر کی جماعتیں بھی موجود ہیں۔ انھوں نے کہا کہ امن عمل کوجاری رکھنے پراتفاق کیا گیا ہے اور آئندہ اے پی سی کی میزبانی جے یوآئی کرے گی۔ کانفرنس میں انتیس سیاسی جماعتوں اورتنظیمیوں کودعوت دی گئی تاہم جماعت اسلامی اورپاکستان تحریک انصاف نے شرکت نہیں کی

یہ بھی پڑھیں  جمبر: قصاب ریٹ لسٹ سے زائد ریٹ پر گوشت فروخت کررہے ہیں۔ اے سی پتوکی سے نوٹس کامطالبہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker