پاکستانتازہ ترین

نیب نے ارسلان افتخار کو تئیس جولائی کو طلب کر لیا

اسلام آباد(بیوروچیف) نیب نے چیف جسٹس کے صاحبزادے ارسلان افتخار کو تئیس جولائی کو طلب کر لیا۔ ملک ریاض مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش ہوگئے، کہتے ہیں کہ تحقیقات رکوانے کے لیئے انہیں اور اہلخانہ کو گرفتار کرنے کی کوششیں کی جاری ہیں۔  ڈاکٹر ارسلان افتخار کیس میں تیسری بار طلبی کے بعد بالاخر ملک ریاض، نیب کی مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کےسامنے پیش ہوگئے۔ ترجمان نیب کے مطابق ملک ریاض نے اپنا تحریری بیان جمع کرا دیا ہے۔ تحقیقاتی ٹیم نے ملک ریاض سے، ارسلان افتخار پر لگائے گئے الزامات سے متعلق تفتیش کی جبکہ ملک ریاض نے اس حوالے سے کچھ مواد پیش کیا۔ ملک ریاض کو ایک تفصیلی سوالنامہ بھی دیا گیا جس کے جوابات انہیں چوبیس جولائی تک جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ملک ریاض نے مزید ثبوت مہیا کرنے کے لیے مہلت مانگ لی ہے۔ نیب نے ارسلان افتخار، احمد خلیل اور سلمان احمد کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیئے تئیس جولائی کو طلب کر لیا ہے۔ آئی جی اسلام آباد اور آئی جی پنجاب کو متعلقہ لوگوں کو نوٹس بھجوانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ مشترکہ ٹیم تحقیقات کے لیے جلد برطانیہ اور دوبئی کا دورہ کرے گی اور ثبوتوں کی روشنی میں تحقیقات کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔ ادھر ملک ریاض نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ انہیں چیف جسٹس پر پورا اعتماد ہے ،،، جسے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم پر تحفظات ہیں وہ اسے تبدیل کرا دے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ مشترکہ تحقیقات رکوانے کے لیے انہیں اور ان کے خاندان کو گرفتار کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  فلم کے لئے ہدایت کاروں کے پیچھے نہیں بھاگتی، عالیہ بھٹ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker