پاکستانتازہ ترین

چوہدری عبدالمجید اور چوہدری یٰسین کی آصف زرداری سے ملاقات

ali_zardariکراچی (مانیٹرنگ سیل) وزیر اعظم و سینئر وزیر آزاد جموں و کشمیر کی سابق صدر پاکستان وشریک چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی آصف علی زراری سے اہم ملاقات،آزاد کشمیر کے حکومتی امور ،پارٹی معاملات ،مسئلہ کشمیر اور آزاد خطہ کی تعمیر و ترقی بارے تفصیلی بات چیت،وزیر اعظم چوہدری عبدالمجید نے آزاد کشمیر کے سیاسی حالات ،پارٹی معاملات اور مسئلہ کشمیر پر شریک چیئرمین کو بریف کیا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم آزاد کشمیر چوہدری عبدالمجید اور سینئر وزیر چوہدری محمد یٰسین نے گزشتہ روز بلاول ہاؤس کراچی میں سابق صدر پاکستان و شریک چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی آصف علی زرادری سے ملاقات کی ہے جس میں آزاد کشمیر کے حکومتی امور، مسئلہ کشمیرآزاد خطہ کی تعمیر و ترقی بارے تفصیلی بات چیت ہوئی اس موقع پر پارٹی معاملات پر بھی طویل گفت و شنید ہوئی ،یہ ملاقات قریب اڑھائی گھنٹے تک جاری رہی وزیر اعظم آزاد کشمیر و سینئر وزیر نے سابق صدر وشریک چیئرمین پیپلزپارٹی کو آزاد کشمیر میں پیپلز پارٹی کے اڑھائی سالہ دور اقتدار میں عوامی فلاح و بہود اور آزاد کشمیر کی ترقی و خوشحالی کے لئے اٹھائے جانے والے اہم حکومتی اقدامات کے حوالے سے بریف کیا۔اس موقع پر سابق صدر و شریک چیئرمین پیپلز پارٹی آصف علی زرداری نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پیپلز پارٹی نظریہ مفاہمت پر یقین رکھنے والی واحد وفاقی جماعت ہے ہم نے اپنے دور میں مفاہمت کی سیاست کو پروان چڑھایا،ہم نے ملکی بقاء و سلامتی کے لئے مفاہمت کی ضرورت پر زور دیا ،پارلیمنٹ کو کلی اختیارات کا مالک بنایا تاکہ عوام کے منتخب شدہ نمائندے ملک و قوم کے فیصلے کریں،ہم نے مشکل ترین دور میں عوام کی صحیح معنوں میں خدمت کی ،پاکستان کی عوام پیپلز پارٹی کو نجات دہندہ کے طور پر ہمیشہ یاد رکھے گی۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں پیپلز پارٹی کے حقیقی کارکن آج اقتدار میں ہیں،کارکنوں اور عوام کو سربلند کرنا پیپلز پارٹی کا شیوہ رہا ہے۔سندھ ،گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں قائم پیپلز پارٹی کی حکومتیں بھی مفاہمتی سیاست کی علمبردار ہیں ،آزاد کشمیر میں پیپلز پارٹی کی حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرے گی بطور شریک چیئرمین یہ میری ذمہ داری ہے کہ میں آزاد کشمیر میں اپنی بنائی ہوئی حکومت کی حفاظت کروں پاکستان میں بھی لوگ ہر روز ہماری حکومت کے جانے کی تاریخیں دیتے تھے لیکن دنیا نے دیکھا کہ ہم نے پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار اپنی آئینی مدت پوری کی اور جمہوریت کے پودے کو ایک تناور درخت بنایاآزاد کشمیر میں بھی میرے جیالے یہی مثال قائم کریں گے۔شریک چیئرمین نے کہا کہ کشمیریوں نے اپنے لہو سے تحریک آزادی کشمیر کی بنیاد رکھی ہے ،نظریہ الحاق پاکستان کشمیریوں کی پاکستان سے بے لوث محبت کا واضح ثبوت ہے پاکستانی عوام کا کشمیری قوم سے نظریاتی تعلق ہے جو کبھی کمزور نہیں پڑ سکتا،مقبوضہ جموں و کشمیر میں آزادی و حق خود ارادیت کے لئے لڑی جانے والی جنگ اپنے منطقی انجام تک ضرور پہنچے گی اور وہ دن بہت جلد آنے والا ہے جب کشمیری قوم اپنی مرضی سے اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا اختیار حاصل کر لے گی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی بنیاد مسئلہ کشمیر پر ہے ،ذولفقار علی بھٹو اور شہید بی بی نے عالمی فورمز پر کشمیریوں کے حق کے لئے دیدہ دلیری سے بات کی ،پیپلز پارٹی آئیندہ بھی کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے لئے جدوجہد کرتی رہیگی۔سابق صدر نے مزید کہا کہ آزاد کشمیر کو منگلا ڈیم کی رائیلٹی سمیت تمام آئینی حقوق ملنے چاہیں ،این ایف سی ایوارڈ کے تحت صوبوں کو ملنے والے فوائد برابری کی بنیاد پر آزاد کشمیر کا بھی حق ہے ۔انہوں نے وزیر اعظم اور سینئر وزیر کو ہدایت کی آزاد کشمیر میں جاریزیر تکمیل میگا پراجیکٹس کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے ،عوام کی خدمت اور فلاح و بہبود کے لئے مزید اقدامات کیے جائیں تاکہ عوامی حکومت کے ذریعے لوگوں کو سہولیات ملیں ۔شریک چیئرمین نے مزید کہا کہ عوامی خدمت پر کوئی کمپرومائز نہ کیا جائے ،جمہوریت کو مضبوط اور مستحکم رکھنے کے لئے مفاہمت کی سیاست ناگزیر ہے ۔ملاقات میں پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے پارٹی معاملات پر بھی تفصیلی بات چیت ہوئی ۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ :مایہ ناز سر جن وسماجی شخصیت ڈاکٹر عبداللہ خالد کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت اور رقت آمیز مناظر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker