شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / باشعو ر کےدرمیان بے شعو ر کے درمیان

باشعو ر کےدرمیان بے شعو ر کے درمیان

ذرا ظر ف تو دیکھیں ، کو ئی بو لے تو معلوم پڑتا ، کتنا مخلص اور کتنی ہمد ردی، ہما رے سیا ست دان ، ہا ں ہما رے سیا ست دان ، کبھی کبھا ر نہیں ، اکثر ، جب یہ بو لتے ہیں تو عوام کو افسو س ہی رہ جا تا ہے ،،،دعا ،،
خدا پا ک ہی رحم کر یں ہم پر
اب عوام بھی جا ن چکی ہے کہ قو می اسمبلی کا ایک اجلا س کتنا مہنگا پڑ تا ، وہ بھی عوام کے پیسے سے ، اس اجلا س میں تشر یف لا نے والے کہتے ہیں کہ عوام حا لا ت کو سمجھے اور دو کی بجا ئے ایک رو ٹی پر گز ارہ کر ئے ،عوام تو گز ارہ کر ئے گی ، مگر یہ سیا ست دان گز ارہ کر یں گے، مو لا نا صا حب جب سے با ہر ہو ئے ہیں ، وہ اسی نیت سے ہیں کب وہ میدان ہی خراب کر دیں تا کہ ہم نہ کھیلیں تو با قی بھی نہ کھیل سکیں، ایک قو می اسمبلی کے اجلا س میں بے شما ر خر چ اور عوام کو حا صل کیا ، حا صل یہ ہے ، ہم عوام کو بتا تے ہیں ، اجلا س جو پچھلے دو تین دن سے ہو رہے اسی پر صر ف با ت کر تے ہیں ، پیپلز پا رٹی کا اعتر اض کے عمران خاں فیل ہو چکے ہیں اس لیے منسٹر تبد یل کر رہے ہیں ، لہذا عمران خاں کو گھر چلے جا نا چاہیے ، اور ان منسٹر کی زیا دہ تعد اد ان کی جو پیپلز پا رٹی اور ق لیگ کے دور میں بھی منسٹر رہ چکے ہیں ، تو عمران خاں صا حب یہ تبد یلی لا ئے ہیں ، اس اعتر اض پر تو خاں صا حب کی تر جما نی کی جا ئے تو کہا جا ئے گا کہ جیسے حفیظ شیخ صا حب کو اب منسٹر لگایا گیا ہے ایسے پیپلز پا رٹی کے دور میں بھی لگا یا گیا تھا تب آپ نے کو ن سا دبا ؤ کے آ گے گھٹنے نہیں ٹیکے تھے ، اس اعتر اض کے جو اب کو سمجھ کر عوام بھی پیپلز پارٹی سے پو چھتی ہے کہ بے فضو ل بحث کیو ں کی جا رہی ہے ، حقیقی معنی میں اپو ز یشن کا رول ادا کر یں تا کہ عوام کی ہمد ردی آ پ کی طر ف مو ڑے ،دو سر ا اعتر اض یہ کہ خاں صا حب نے ایران میں ارشا د فر ما یا کہ جا پان اور جر منی پڑ وسی ہیں ، لہذا لند ن کی یو نی ور سٹی کر کٹ کی بنا پر ڈگر ی دے گی تو ایسے ہی حال ہو گا ، دوسری جا نب سے بھی یہی کہا گیا کہ بلا ول صا حب خاں صا حب کی زبا ن سمجھے نہیں اور لہذا بلا ول صا حب پر جو لند ن میں تعلیم پر خر چ ہو ا وہ ضا ئع ، اب عوام ہی بتا ئیں ، خاں صا حب نے جو کہا کہ جا پا ن اور جر منی پڑ وسی تو عام فہم سمجھ سکتا کہ یہ زبان سیلپ ہو نا یا زبا ن کی غلطی ہو سکتی ہے ، اس بیان پر بحث کر نا اور وہ بھی قو می اسمبلی کے مہنگے اجلا س میں ایسی فضول بحث تو عوام کو اس سے کیا حا صل ہو نا ، حاصل صر ف سیا ست دان کو ہو نا ہے ، وہ حا صل یہ ہے کہ سیاسی جما عتیں ایک دوسرے کو صر ف لفظی زیر کر نے کے در پے اور بس ، سیا ست دان اس شغول میں لگ جا ئیں تو عوامی مسا ئل کو کون حل کر نے کے لیے اقداما ت یا کا وش کر ئے گا ، سیا ست دان تو ٹھیک ہم عوام کیا کر تے ہیں وہ بھی بتا تے چلتے ہیں ، عوام کل سے سو شل میڈ یا پر حا مد میر صا حب کی بلا ول بھٹو کے سا تھ تصو یر میں لفا فے کو دیکھ کر شغول لگا رہی ہے کہ ہما رے صحا فی ایسے ہیں ، جس نے اس تصو یر میں لفا فا شو کیا اس نے کمال کیا سا تھ عوام تیر کے نشا ن ڈال کر اور زیا دہ کما ل کر تی رہی اور سا تھ کما ل قسم کی دانش کی با تین بھی سا منے آ ئی ہیں، کل سے معلو م پڑا کہ ہما ری قوم تو اتنی سمجھ دار ہے کہ کو ئی بھی ایک تصو یر کو ایڈ کر کر خانہ جنگی کر وا سکتی ہے ، بھا رت والے اب میز ائل کی طا قت کو چھو ڑ کر تصو یر ایڈ کر نے کی مہا رت پر ہو م ور ک شر وع کر یں گے ، اس تصو یر میں دکھا یا گیا کہ حا مد میر صا حب بلا ول بھٹو سے ملے رہے اور لفا فہ نظر آ رہاہے، بے شعو ر نہیں ، با شعور ہی بتا ئیں کیا بلا ول یا حا مد میر اتنے سا دہ کے لفا فہ دیں یا لیں تو تصو یر یں بنوا ئیں گے ، عوام اس قسم کی بحث میں لگی رہے تو سیا ست دانوں سے کیا اعتراض کے وہ قو می اسمبلی کے مہنگے اجلا س میں کیسی بے تکی با تیں کر تے ہیں ۔
پچھلے دنوں ایک میسج ملا ریا سب صا حب وہ لکھتے ہیں کہ ہم نے بہت امید لگا ئی کہ خاں صا حب تبد یلی لا ئیں گے مگر حالا ت بتا رہے ہیں کہ ایسا نہیں ہو نے والا ، میں نے پو چھا کہ آ پ یو رپ میں پا کستان میں کیا چا ہ رہے ہیں آ پ یہاں انجو ائے کر یں ، جو اب ملا کہ ہم یہاں آ ئے وہاں کے حا لا ت کی وجہ سے ، پو چھا کیا وجہ تھی ، جو اب ملا خاں صا حب جس تھا نے کلچر کو ختم کر نا چا ہتے تھے وہ ویسا ہی ہے ،پو چھا کیاآ پ بھی اس کلچر کا شکا ر ہو ئے ، جو اب ملا ، کہ ہاں میں بھلوال جو منڈ ی باوالد ین کے علا قے میں وہاں ایک معا ملے پر تھا نے گے ان سے مد د لی جب کچھ نہ بنا سکا تو یو رپ کا رخ کیا اور یہاں رہنا ہی بہتر پا یا ، یہاں آ نے میں ایک نقصا ن یہ تو ہوا کہ اپنے خا ندان سے دور ہوئے مگر ، یہاں کو ئی بھی قانونی چا رہ گو ئی کر یں تو مشکل سا منے نہیں آ تی ، عوام کو ہم اب بھی یہی کہیں گے آ پ خاں صا حب کی تبد یلی کا انتظا ر کر یں،
خاں صا حب نے منسٹر تبد یل کیے ان میں ڈا کٹر فر دوس عا شق اعوان کو بھی نوازہ گیا تو خاں صا حب ہی بتا ئیں کہ جس سیا ست دان کو عوام ووٹ کی طا قت سے اگنو ر کر ئے اور آ پ کی پا رٹی جو تبد یلی کو نام پر آ گے آ ئی ہے وہی اسی اگنو ر کیے گے سیا ست دان کو نواز دے تو پھر معذرت تبد یلی کی با تیں چھو ڑ دیں ، ہم ما نتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ حفیظ صا حب کیسے آ ئے مگر جو آ پ کے ہا تھ میں اس پر تو تبد یلی دکھا ئیں ، کم از کم عوام کو حو صلہ تو رہے کہ خاں صا حب زیا دہ نہیں تھوڑ ی بہت تبد یل کو مان رکھ رہے ہیں ، اپو ازیشن جما عتو ں میں مولا نا صا حب فر ما رہے ہیں منسٹر بدلے لہذا حکو مت فیل ، تو مو لا نا صا حب یہ جو اب آ ئے ہیں یہ آ پ کے سا تھی رہے ہیں تب آ پ ان کے بر ابر کی سیٹ پر تھے تب آ پ کو ان تما م لو گوں سے کو ئی اعتر ا ض نہیں تھا ، اب عوام اور ملک کی ہمد ردی زیا دہ جا گ رہی آ پ میں ،
حکو مت جب یہ جا ئے گی تو تحر یک انصا ف والے عوام کو یہ بتا ئیں گے کہ ہم کھلا ڑی اوپر نیچے کر تے رہے تو کا ر کر دگی نہیں دکھا سکے لہذا اوروقت دیا جا ئے اور اپو از یش والے کہیں گے کہ ہم بہت محنت اور ہو م ور ک کر کے قو می اسمبلی کے اجلا س میں آ تے تھے اور کو ئی نو جو ان سیا ست دان تقر یر کر تا تھا تو ہم گو بے بی گو کے نعر ے بہت جو ش سے لگا تے تھے ،،،یہ ہیں ہما رے سیا ست دان ،
ذرا ظر ف تو دیکھیں ، کو ئی بو لے تو معلوم پڑتا ، کتنا مخلص اور کتنی ہمد ردی، ہما رے سیا ست دان ، ہا ں ہما رے سیا ست دان ، کبھی کبھا ر نہیں ، اکثر ، جب یہ بو لتے ہیں تو عوام کو افسو س ہی رہ جا تا ہے ،،،دعا ،،
خدا پا ک ہی رحم کر یں ہم پر

یہ بھی پڑھیں  الطاف حسین کو غلطی کا احساس ہے امید ہے آئندہ ایسی غلطی نہیں کریں گے، پرویزرشید

error: Content is Protected!!