پاکستانتازہ ترین

بابر اعوان کے وکیل نے انٹرا کورٹ اپیل واپس لے لی

اسلام آباد(بیوروچیف) سابق وزیر قانون بابراعوان نے توہین عدالت کیس میں فرد جرم عائد کئے جانے والے فیصلے پر سپریم کورٹ میں دائر انٹرا کورٹ اپیل عدالتی ہدایت پرواپس لے لی ہے۔ چیف جسٹس افتخارمحمدچودھری کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے بابراعوان کی انٹراکورٹ اپیل کی سماعت کی۔ بابراعوان کے وکیل علی ظفر نے دلائل میں کہاکہ توہین عدالت کیس کی سماعت کرنے والے دو رکنی بنچ میں غیر مشروط معافی نامہ داخل کرایا گیا ، اس کو دو رکنی بنچ نے ابھی تک قبول یا مسترد نہیں کیا ہے، عدالت اگر معافی نامہ پر فیصلہ کے بغیر ٹرائل کرتی ہے تو انہیں اس پر تحفظات ہوں گے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئے کہ معافی نامہ دراصل اعتراف جرم ہے، عدالت سے صرف درخواست کی جاسکتی ہے اسے ریگولرائز نہیں کیا جاسکتا۔۔عدالت کاذاتی عناد نہیں ہے،تحمل کا مظاہرہ کیا۔بابراعوان کا وکالت لائسنس عارضی معطل کیا، فردجرم سے کیوں ڈر رہے ہیں۔ چیف جسٹس نے انہیں مشورہ دیا کہ اپیل واپس لے لیں، تمام راستے کیوں بند کرنا چاہتے ہیں،اس پر اپیل واپس لے لی گئی جس کے بعد مقدمے کوبھی نمٹادیاگیا۔

یہ بھی پڑھیں  ایڈین اداکارہ کرینہ کپور نےمسلمان ہونے کا حتمی فیصلہ کرلیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker