پاکستانتازہ ترین

جان بچ گئی، عدالت نے بابراعوان کو مہلت دیدی

اسلام آباد (بیوروچیف) سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں بابر اعوان کو صفائی کی شہادتیں جمع کرانے کی مہلت دیتے ہوئے کیس کی سماعت ستائيس جون تک ملتوی کردی۔ جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی، دوران سماعت، اٹارنی جنرل نے پریس کانفرنس کی سی ڈی کو استغاثہ کی شہادت کے طور پر پیش کیا، عدالت نے اٹارنی جنرل کا بیان ریکارڈ کرکے استغاثہ کی شہادت ختم کردی۔ جسٹس اعجاز افضل نے کہا کہ قواعد کے مطابق اعتراض فوری طور پر ریکارڈ کرانا ہوتا ہے، جس پر بابر اعوان نے کہا کہ پھر یہ اعتراض ریکارڈ پرلايا جائے کہ یہ پریس کانفرنس توہین عدالت نہیں تھی، بابر اعوان نے کیس میں خود پیش ہونے کی استدعا کی، جسے عدالت نے مسترد کردیا۔ بابر اعوان کا کہنا تھا کہ انہوں نے تو معافی کے ذریعے ایک راستہ نکالا جسے قبول نہیں کیا گیا، بطور وکیل عدلیہ کے وقار کو برقرار رکھنا چاہتے ہيں، وہ ٹرائل نہیں چاہتے تھے اس لیے انہوں نے صفائی کی شہادتوں پر غور نہیں کیا،انہيں آٹھ ہفتے کا وقت دیا جائے تاکہ شہادتیں جمع کرا سکیں، عدالت نے چار ہفتوں کی مہلت دیتے ہوئے سماعت ستائیس جون تک ملتوی کردی۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker