پاکستان

اسلام آباد:بابر اعوان توہین عدلات کیس: فیصلہ 8 مارچ کو سنایا جائے گا

اسلام آباد(نامہ نگار) توہین عدالت کیس میں سپریم کورٹ میں بابر اعوان کی پریس کانفرنس کی ویڈیو دکھائی گئی اور ان کے وکیل علی ظفر نے دلائل مکمل کر لئے جس پر عدالت نے فیصلہ آٹھ مارچ تک محفوظ کر لیا ۔ جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے دو رکنی بینچ نے بابر اعوان کیخلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی ۔ عدالت کی کاروائی کے دوران، عدالت میں بابر اعوان کی پریس کانفرنس کی ویڈیو دکھائی گئی ۔۔ بابر اعوان کے وکیل علی ظفر نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ بابر اعوان کی پریس کانفرنس میں کوئی ایسی بات نہیں جو توہین عدالت کے زمرے میں آئے ۔۔ اس کا ٹرانسکرپٹ بھی موجود ہے ۔ جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ بابر اعوان کو  بطور وکیل علم ہے کہ عدالت کا احترام کیا ہوتا ہے ۔۔ انہوں نے علی ظفر سے استفسار کیا کہ آپ کا کیا مطلب ہے عدلیہ حکومت پر قبضہ کرنا چاہتی ہے ۔ علی ظفر نے کہا کہ میں نے اپنے جواب میں اظہار افسوس کیا ہے ۔ جسٹس اطہر سعید نے کہا کہ معافی اور اظہار افسوس میں فرق ہوتا ہے تو علی ظفر نے کہا کہ نواز شریف نے بھی اظہار افسوس کیا تو عدالت نے اسے قبول کیا

یہ بھی پڑھیں  پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں بھارتی جارحیت کےخلاف قرارداد منظور

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker