تازہ ترینعلاقائی

بدین:پانی کی شدید قلت کےباعث آبادگارطبقہ معاشی تباہی کےکنارے پرپہنچ گئے

بدین﴿  نامہ نگار ﴾ دریائے سندھ میں پانی موجودگی اور کوٹڑی ڈائون اسٹریم میں پانی کی فراہمی کے باوجود بدین ضلع کے نہروں میں پانی کی شدید قلت کے باعث آبادگار طبقہ معاشی تباہی کے کنارے پر پہنچ گئے ،بدین ضلع کو زرعی پانی فراہم کنندہ لائن چینل ڈویزن پھلیلی کئنال ڈویزن اور گونی کئنال ڈویزن کی سینکڑوں شاخوں میں پانی کی قلت کے باعث دو لاکھ ایکڑ سے زائد زرعی زمین پر خریف کی فصل دھان کی کاشت نہ ہو سکی جبکے مذکورہ ڈویزن سے منسلک نہروں اور شاخوں کی ٹیل میں کپاس گنا اور مرچ کی کاشت کی گئی فصلیں پانی نہ ملنے کی وجہ سے سوکھ کر تباہ ہو رہے ہیں محکمہ آبپاشی کے زرائع کے مطابق لائینڈچینل ڈویزن کے نہروں کو پھلیلی ،گونی،کئنال سے علی پور سائفن کے زریعے زرعی پانی فیڈ کیا جاتا ہے لیکن نہروں کی مرمت اور کھدائی نہ ہونے کے باعث مطلوب پانی چھوڑ نے سے نہروں میں شگاف پڑ جاتے ہیں زرائع کے مطابق 6 ماہ پہلے نہروں کی مرمت کی کھدائی کے لئے اور پشتوں کی مضبوطی کے لئے سند ھ حکومت نے ساڑے چھ کروڑ روپے فراہم کیے تھے ،جو رقم محکمہ آبپاشی کے اہلکار اور لیفٹ بئنک کئنال ایریا واٹر بورڈ کے چیئرمین میں ملی بھگت کر کے خورد برد کر لئے اور دکھاوے کے لئے نہ ہونے کے برابر کام کر کے کاغذوں کا پیٹ بھر لیا ہے نہروں کی مرمت کھدائی اور پشتوں کی مضبوطی کے لئے ملنے والی رقم میں خورد برد کی وجہ سے گذشتہ ایک مہینے میں گونی کئنال ،علی واہ،گھار شاخ،پھلیلی کئنال،میں اب تک 14 سے زائد شگاف پڑ چکے ہیں گذشتہ سال کے سیلاب سے تباہ حال بدین کا آبادگار طبقہ کروڑوں روپے قرضہ اور ویاج پر پیسے لیکر خریف کی کاشتکاری کیلئے اپنی زرعی زمینیں تیار کی ہے 800 روپے کلو دھان کا بیج خرید کر لگا یاگیا دو ماہ گذر جانے کے باوجودبھی زرعی پانی فراہم نہ ہونے کی وجہ سے وہ بیج سوکھ کر جل گیا ہے ، بدین کے آبادگاروں کی جانب سے مسلسل پانی کی قلت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کرنے کے باوجود بھی محکمہ آبپاشی کے اہلکاروں اور بدین سے منتخب نمائندوں کے کان پر جوں بھی نہیں رینگتی بدین کے آبادگاروں نے پانی کی شدید قلت کا زمیوار لیفٹ کئنال ایریا واٹر بورڈ کے چیئرمین ،ڈاریکٹر سیڈا اور چیف انجنیئر کوٹری بئراج کو ٹھراتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیا ہے کے سپریم کورٹ کے حکم پر عمل درامدکرتے ہوئے ڈاریکٹر سیڈا حبیب عرثانی کو فوری طور پر عہدے سے ہٹایا جائے اور سپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت نئے ڈاریکٹر کا تقرر کیا جائے اور بدین میں پانی کی قلت پیدا کرنے کی تحقیقات کر اکے زمہ وار افسران کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے

یہ بھی پڑھیں  کورکمانڈرز اجلاس: انتخابات میں فوج کی تعیناتی کا پلان منظور

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker