تازہ ترینعلاقائی

بدترین لوڈشیڈنگ کے باعث فقیروالی میں پینے کے پانی کی شدید قلت

بہاولپور﴿ بیو رو چیف﴾ بدترین لوڈشیڈنگ کے باعث فقیروالی میں پینے کے پانی کی شدید قلت نے بحران کی شکل اختیار کر لی بدترین لوڈشیڈنگ اور پانی کی شدید قلت کے خلاف فقیروالی کی روزہ دار خواتین تنگ آ کر احتجاج کے لئے سڑکوں پر نکل آئیں احتجاجی خواتین نے سروں پر پانی کے خالی گھڑے اٹھا کر فقیروالی ہائی وے روڈ ٹائروں کو نظر آتش کر کے بلاک کر دیا خواتین نے بدترین لوڈ شیڈنگ اور پانی کی شدید قلت پر صدر زرداری ، وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور پانی بجلی کے وفاقی وزیر احمد مختاراور پیپلز پارٹی کے مقامی ایم پی اے شوکت محمود بسرائ کو جھولیاں اٹھا کر بددعائیںدی احتجاجی خواتین نے کہا کہ ماہ رمضان المبارک میں حکمرانوں نے بدترین لوڈ شیڈنگ کے ذریعے روزہ داروں کو زندہ درگور کر دیا ہے اور ہزاروں مرد و خواتین کو روزہ چھوڑنے پر مجبور کر دیا ہے اس گناہ کا عذاب حکمرانوں کو لے ڈوبے گا مذید براں احتجاجی خواتین نے بلدیہ فقیروالی کے پانی کی فراہمی کے نظام کو ناقص قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ بلدیہ کا ہمارے ساتھ سلوک انتہائی ناروا ہے اور پینے کے پانی کے نظام میں بہتری لانے کے لئے کوئی اچھا اقدام کیا جاتا بلکہ ہمارے ساتھ بلدیہ آفس میں پانی کی فراہمی کے سلسلہ میں جانے والوں کو بلدیہ ملازمین کی طرف سے بدتمیزی کا سامنا کرنا پڑتا ہے انہوں نے کہا کہ بلدیہ ملازمین پیسے لیکر امیر لوگوں کے گھروں میں ٹینکر کے ذریعے پانی پہنچاتے ہیں جو ہم غریبوں کے ساتھ سراسر ظلم ہے انہوں نے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے اور پانی کے نظام کو بہتر بنانے کامطالبہ کیا ہے۔احتجاج کے دوران اسسٹنٹ کمشنر خواجہ وقار احمد ،تحصیلدار احمدجاوید چیمہ ،ایس ایچ او چوہدری عمران ،اور نائب تحصیلدار شاہ نوازنے احتجاجی مردو خواتین کے ساتھ کامیاب مذاکرات کئے جس کے بعد احتجاجی افراد منتشر ہوگئے۔

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:ہم اہل علاقہ کے مسائل سے بخوبی اگاہ ہیں، علاقہ کی قسمت بدل کررکھ دینگے، سید جعفرعلی شاہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker