تازہ ترینعلاقائی

بہاولپورصوبہ بحالی کے کمیشن کو متوازی بنایاجائے سابق سینٹرمحمد علی درانی

بہاولنگر ( بیو رو چیف)ربہاو ل پورصوبہ بحالی کے کمیشن کو متوازی بنایا جائے ۔ جس میں حکومت اپوزیشن بہاول پور اور ملتان کی نمائندگی برابری کی سطح پر ہو۔ آئندہ الیکشن سے قبل اگر صوبہ بہاول پور کو بحال نہیں کیاجاتا تو ہم سمجھیں گے کہ قومی سطح پر پارٹیاں عوام سے سیاست کر رہی ہیں ۔ اس کے بعد بہاول پور کی عوام کو اپنا لائحہ عمل تیار کرنے کا اختیار ہوگا۔ صوبہ کی بحالی مخالفت یوسف رضا گیلانی نے کی ۔اب وہ اپنے بیٹے کو وزیراعلیٰ بنانے کے خواب دیکھ رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار سابق سینٹر محمد علی درانی نے ہم خیال گروپ کے جنرل سیکریٹری پنجاب سید قلندر حسنین شاہ او ر سابق ممبر پنجاب اسمبلی سید نذر محمود شاہ کے ہمراہ بہاولنگر میں اپنی ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران کیا ۔ انہوں نے کہا کہ بہاول پور کی عوام نے کبھی انگریز کو اپنے اوپر راج نہیں کرنے دیا تھا ۔بہاول پور پاکستان بنانے کا علاقہ ہے۔ بہاول پور صوبہ کی بحالی کے سلسلے میں کسی کو سیاست چمکانے کی اجاز ت نہیں دی جائے گی ۔بہاول پور کی عوام کبھی بھی جنوبی پنجاب صوبہ کا حصہ بننا قبول نہیں کریگی ۔ جنوبی پنجاب صوبہ کا حصہ بنانا ایک سازش ہے۔کیونکہ اس طرح بہاولپور چولستان بہاول پور پر قبضہ کرنے کی کوشش کی جاری ہے۔ لسانی نفرتیں پھیلانے کی سازش کی جاری ہے۔ بہاول پور کی عوام کسی صورت میں ایسا نہیں ہونے دی گی۔ انہوں نے کہا کہ 18ویں ترمیم کے بعد صوبے کی تقسیم کا حق صوبے کا ہے۔ اس سے قبل بہاول پور صوبہ کے خیال سمجھا جاتا تھا مگر صوبائی اسمبلی کی متفقہ قرارداد کے بعد ایک حقیقت بن چکا ہے۔ اب قومی اسمبلی کی ذمہ داری ہے کہ صوبائی اسمبلی کی قراردار پر عمل دار آمدکرائے۔ بہاول نگر بحالی صوبہ بہاول پور کی تحریک کا ہراوال دستہ ہوگا۔ کیونکہ اس جدوجہد کو ہم نے شروع کیا او ر صوبہ کسی اور کا بنے ۔ انہوں نے کہا کہ اٹھارویں انسویں بیسویں ترامیم عبوری حکومت کے معاملات اتفاق رائے سے حل ہو سکتے ہیں تو صوبہ کی بحالی کی باری لڑائی کیوں شروع کی گئی ۔انہوں نے کہا کہ ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ آئندہ الیکشن سے قبل صوبہ بہاول پور بحال کیاجائے۔ اگر الیکشن سے قبل صوبہ بحال نہیں کیا جاتا تو ہم بہاول پور کی سطح پر مشاورت کر کے تحفظ بحالی صوبہ بہاولپور آغاز کریں گے ۔

یہ بھی پڑھیں  کالعدم طالبان پاکستان نےیک طرفہ جنگ بندی کی شرط مستردکردی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker