پاکستانتازہ ترین

بلوچستان میں بیرونی مداخلت کے بیانات ریاست کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے،براہمدغ بگٹی

کوئٹہ ﴿بیوروچیف ﴾بلوچ ری پبلکن پارٹی کے سربراہ نوابزادہ براہمدغ بگٹی نے کہا ہے کہ آزادی بلوچ کا حق ہے جسے زبردستی غصب کیا گیا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں بیرونی مداخلت کے بیانات ریاست کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے بلوچستان میں بیرونی مداخلت نہیں بلکہ ریاست کی 63سالہ استحصالی پالیسیوں کے نتائج ہیں آج بلوچ قوم مکمل طورپر باشعور ہو چکی ہے اور پاکستان کے حکمرانوںکی ظالمانہ اور استحصالی پالیسیوں کیخلاف جدوجہد کررہی ہے انہوں نے کہا کہ اب تک ہمیں بین الاقوامی امداد نہیں مل رہی اگر بین الاقوامی امداد ملے تو اس کا خیرمقدم کریں گے کیونکہ ہم اپنی سرزمین ساحل و وسائل اور قومی تشخص کے دفاع کی جدوجہد کررہے ہیں ایسے حالات میں بین الاقوامی امداد ملنا ہمار ا حق ہے جب قابض ریاست کو بین الاقوامی معاونت مل سکتی ہے تو اپنے حقوق کی جدوجہد کرنے والے بلوچوں کو بین الاقوامی امداد کو نہیں مل سکتی اگر ہمیں بین الاقوامی امداد ملی ہوتی تو آج بلوچستان آزاد ہو چکا ہوتا بلوچ قومی جہد آجوئی کو مزید منظم اور مستحکم کرنے کیلئے بین الاقوامی امدا د کا خیرمقدم کریں گے انہوں نے کہا کہ ہمیں پاکستان کیساتھ رہنے میں کبھی کوئی فخر محسوس نہیں ہوا آزادی بلوچ کا حق ہے جسے زبردستی غصب کیا گیا آج ریاست کے پاس اپنے مفادات کو تحفظ دینے کے سوا اور کچھ نہیں اوراسی لئے وہ بلوچستان کے مسئلے کے حل کیلئے ہلکان ہورہی ہے ریاستی حکمران جھوٹے اور بے بنیاد بیانات دے رہے ہیں جسے سننے کا ہمارے پاس وقت نہیں انہوں نے کہا کہ خود کو جمہوری ریاست کہنے والے کس قانون کے تحت بلوچوں کو جبری طورپر لاپتہ کرکے ان کی مسخ شدہ لاشیں پھینک رہے ہیں یہ کون سا قانون ہے جس نے ہمیشہ بلوچ کا استحصال کیا ہے شہید وطن نواب محمد اکبرخان بگٹی نے بلوچوں کے حقوق کی آواز بلند کی تو انہیں اس کی پاداش میں شہید کر دیاگیا مگر ان کی شہادت نے بلوچوں میں بیداری پیدا کی ریاست نے نواب بگٹی کو شہید کرکے یہ سمجھ لیا تھا کہ بلوچ کو محکوم بنائے رکھے گے مگر آج بلوچ شہید وطن نواب محمداکبرخان بگٹی و دیگر بلوچ شہدائ کی قربانیوں کو مشعل راہ بناتے ہوئے آزاد بلوچستان کی جدوجہد میں مصروف عمل ہیں انہوںنے کہا کہ پاکستان اسلام آباد کے کنٹرول میں ہے اور 63سالوں سے بلوچستان کی تقدیر کا فیصلہ ہمیشہ پنجاب اور استحصالی قوتوں نے کیا مگر اب ایسا نہیں ہوگا بلوچ اپنی تقدیر کے فیصلے خود کریں گے بلوچ قوم میں آزادی کیلئے شعور پایا جاتا ہے اور وہ اسی کیلئے جدوجہد کررہی ہے

یہ بھی پڑھیں  ڈسکہ: ٹی ایم اے ڈسکہ کی غفلت لاپرواہی،شہر میں صفائی اور سیوریج کا نظام درہم برہم، انتظامیہ خاموش تماشائی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker