محمد شفقت اللہ خان سیال

  • آخر کار ضمیر ہے کیا۔۔

    میں صبح کے ٹائم تقریبا دس بجے کے قریب یوٹیلٹی سٹور کے سامنے سے گزار رہا تھا۔کہ کیا دیکھتا ہوں ۔ایک مردوں کی لمبی قطار…

    مزید پڑھیں
  • کیا میں صحافی ہوں

    میں ڈی ایچ کیو ہسپتال کی ایمرجنسی میں کھڑا تھا۔اور منظر دیکھا رہا تھا۔کہ کافی لوگ ایک چارپائی اٹھائے ہوئے ہسپتال کے میں گیٹ سے…

    مزید پڑھیں
  • کوئی تو نیک ایمانداراورفرض شناش افسر ہوگا

    آج نہ جانے اس دور کے مسلمانوں کے کو کیا ہو گیاہے۔جیسے ہی ماہ رمضان آیا نہ ہی اس میں کوئی مہنگائی میں کوئی کمی…

    مزید پڑھیں
  • میراشہر جھنگ

    آج مجھ کو یہ سمجھ نہیں آتی کہ ہمارا شہر ترقی کیوں نہیں کرپارہا۔ترقی کرنے کی بجائے دن بادن اس کی حالات دیکھ کر رونا…

    مزید پڑھیں
  • انسان کاضمیر اورمنافقت

    آج ہر انسان کے ذہن اس طرح کے ہوکر رہے گئے ہیں۔کہ ان کے ذہن میں یہی ہے ۔کہ میرے سے زیادہ کوئی عقل مند…

    مزید پڑھیں
  • قدیمی ضلع جھنگ اور اس کے مسائل

    اس شہر کی طرف کسی کی کوئی توجہ نہ ہے۔میں پہلے بھی آپ لوگوں بتا چکا ہوں ۔کہ یہ ایک قدیمی ضلع ہے۔جس کی حد…

    مزید پڑھیں
  • ضمیر

    آج ہم میں احساس ختم ہوکر رہا گیا ۔اگر ہم میں احساس ہوتا ۔تو ہمارے پیارے ہی غریب بھائیوں کی بچیاں ایسے ہی گھروں میں…

    مزید پڑھیں
  • ضمیر کی آواز

    میرے آفس کے قریب پہاڑے شاہ گروانڈ ہے جہاں گندگی کے ڈھیر لگے ہوئے ہے ۔گروانڈ کی کوئی جگہ اسی نہیں جہاں پر گندگی نہ…

    مزید پڑھیں
  • غریب کی آواز

    میں نے گاڑی نکالی اور اپنے کیمرہ مین کو لیے کر سیلاب زدہ علاقہ میں چلا پڑا ۔راستے میں دیکھا کے کسی کے مکان وغیرہ…

    مزید پڑھیں
  • آج کا مسلمان

    میں اپنے آفس میں بیٹھا خبریں لکھنے میں مصروف تھا کہ میرا دوست آگیا اس کو ملنے کے اس کی خیریت دریافت کی ،تو اس…

    مزید پڑھیں
Back to top button
error: Content is Protected!!