پاکستانتازہ ترین

دوسال کے اندر ترقیاتی ٹارگٹ پورا کرینگے،چوہدری عبدالمجید

ch abdul majeedآذادکشمیر(چیف رپورٹر آزاد کشمیر)وزیر اعظم آزادکشمیر چوہدری عبدالمجید نے کہا ہے کہ حویلی ایک نیا ضلع ہے اور لائن آف کنٹرول پر واقع ہے۔موسم سرما میں برفباری کے باعث اس کا دوسرے علاقوں سے رابطہ منقطع ہو جاتا ہے۔اس کی تعمیر وترقی ،فلاح وبہبود کے منصوبے ہنگامی بنیادوں پر مکمل کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔ سڑ کوں کو برفباری کے دوران راستے صفاف رکھنے کے لیے شاہرات کی مشینری موجود ہونی چاہیے۔ آزادکشمیر کا قدرتی حسن سرسبز جنگلات سے ہے جنگل سے سبز لکڑی کی کٹائی پر سختی سے پابندی لگائی جائے ۔ جنگلات کی زمین قابضین سے بھی فوری خالی کروائی جائے۔ بصورت دیگر محکمہ کے ذمہ داران کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ہائیڈرل پراجیکٹس کے منصوبوں کو فوری طور پر مکمل کرنے کے لیے بھی اقدامات اٹھائے جائیں اور ان کی تکمیل کے لیے فنڈز اگر دیگر منصوبوں سے بھی کٹ لگا کر بھی دینے پڑیں تو مہیا کیے جائیں گے۔ ملک کو بجلی بحران سے نکالنے کے لیے اس شعبہ میں فوری اور ضروی اقدامات اٹھائے جائیں۔ ضلع آفیسران ترقیاتی منصوبوں کی موقع پر جا کر کام کی رفتار اور تیز کرنے اور اس کا معائنہ کریں ۔ تعمیر وترقی کے منصوبوں میں کوتاہی اور کسی قسم کی رکاوٹ کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔آئندہ ضلع آفیسران سے کام کی رفتار کا جائزہ لینے اور اس حوالہ سے پیش رفت کا ڈپٹی کمشنر جواب دہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز اپنے دورہ حویلی کے دوران ضلع آفیسران کے جائزہ اجلاس کے دوران خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وزیر حکومت فیصل ممتازراٹھور بھی موجودتھے۔اس موقع پر کمشنر پونچھ ڈویثرن سردار خورشید خان، ڈی آئی کی پونچھ سردار گلفراز خان، ڈپٹی کمشنر ضلع حویلی راجہ شفیق کیانی، ڈی آر یو باغ کے راجہ محمد ارشاد، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ سردار محمد صادق خان، تمام محکمہ جات کے ضلع آفیسران بھی موجود تھے۔ وزیر اعظم نے جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بجلی بحران پر قابو پانے کے لیے خطہ کے اندر ہائیڈرل پاور کے منصوبوں کو ہنگامی بنیادوں پر مکمل کرنے کے لیے اقدامات اٹھانے ہونگے۔ ہم آئندہ دو سال کے اندر ان منصوبوں کو مکمل کر کے اپنی ضروریات کا ٹارگٹ حاصل کر لیں گے۔ تعلیمی میدان میں شعبہ زنانہ کو ڈویلپ کرنے کے لیے مزید تعلیمی ادارے اور کالجز کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حویلی اور لیپہ کے لیے میڈیکل کالجز میں دو دونشستیں رکھی جائیں گی۔ اور انجینئرنگ اور آئی ٹی کے لیے بھی ان علاقوں کے لیے مخصوص نشستیں رکھی جائیں گی۔ا نہوں نے کہا کہ میں ہوائی اعلانات کرنے کا قائل نہیں ہوں۔ جو کچھ کہتا ہوں اس پر عملی طور پر اقدامات کرنا چاہتا ہوں۔ سب سے پہلے ہم نے اپنے گھر کی ضروریات کو پورا کرنا ہے اس کے بعد دیگر کام کرنے ہیں۔ پاکستان ہمارا ملک ہے۔پاکستان معاشی اور اقتصادی طور پر مستحکم اور مضبوط ہوگا۔تو ہماری بھی مدد کرے گا۔ہماری کوشش ہے کہ ہم پاکستان کو مضبوط بنانے کے لیے آزادکشمیر میں بھی اقدامات کریں۔ جس سے یہاں پر انڈسٹری کا قیام ہو سکے تاکہ ملک سے بیروزگاری کا خاتمہ ہو۔

یہ بھی پڑھیں  وزیراعظم آزاد کشمیر کی اسلام آباد سے مظفرآباد اچانک آمد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker