پاکستانتازہ ترین

انتخابی اخراجات کیس،الیکشن کمیشن ناکارہ،غیرمتحرک ہوگیاہے،چیف جسٹس

سلام آباد (بیوروچیف)  سپریم کورٹ میں انتخابی اصلاحات کیس کی سماعت کی ہوئی جس میں چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے ہیں کہ الیکشن کمیشن ناکارہ اور غیر متحرک ہوگیا ہے۔  چیف جسٹس افتخار چوہدری کا یہ بھی کہنا تھا کہ اسمگلر چاہے تو الیکشن میں پورے ملک کو خرید لے۔ اللہ کی مہربانی سے الیکشن کمیشن نے کبھی زائد اخراجات کی تحقیقات نہیں کیں۔ عدالت عظمیٰ میں انتخابی اصلاحات اور اخراجات سے متعلق درخواست کی سماعت کے دوران الیکشن کمیشن کے ڈی جی شیر افگن نے عدالت کو بتایا کہ بڑی سیاسی جماعتیں الیکشن کمیشن کو غلط اکاؤنٹس بتاتی ہیں، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ الیکشن کمیشن سیاسی جماعتوں کے اکاؤنٹس کی جانچ پڑتال نہیں کرتا تو پھر سیاسی جماعتیں اپنے اکاؤنٹس پوسٹ آفس کو بھجوا دیا کریں۔  ایم کیو ایم کے وکیل فروغ نسیم سے چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا امیدواروں کو پارٹی ٹکٹ فری دیا جاتا ہے یا فیس لے کر۔ روغ نسیم نے کہا کہ ان کی پارٹی پیسہ دے کر ٹکٹ حاصل کرنے والے کو نااہل کر دیتی ہے۔ پارٹی میں رضاکارانہ طور پر فنڈز دیے جاتے ہیں۔ جسٹس طارق پرویز نے ریمارکس دیئے کہ پاکستان میں فنڈز پارٹی کو نہیں پارٹی سربراہ کے پاس چلے جاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  عمران خان الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ہدایات کو پس پشت ڈالتے ہوئے لودھراں جلسے میں پہنچ گئے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker