تازہ ترینعلاقائی

پنجاب حکومت بچوں کو قتل کرنے والے دہشت گردوں کو پکڑنے کی بجائے چائلڈ لیبر استعمال کرنے والے بھہ مالکان کو پکڑ رہی ہے

بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیرو ۔پنجاب حکومت بچوں کو قتل کرنے والے دہشت گردوں کو پکڑنے کی بجائے چائلڈ لیبر استعمال کرنے والے بھہ مالکان کو پکڑ رہی ہے ۔ملوں، ہوٹلوں اور دکانوں میں بھی چائلڈلیبر لاکھوں کی تعداد میں کام کر رہی ہے ۔صرف بھٹہ مالکان کو اس جرم میں پکڑنا امتیازی سلوک ہے ۔حکومت بھٹوں پر کام کرنے والے کروڑوں خاندانوں کے لئے پہلے روٹی کپڑا اور مکان مہیا کرے پھر گرفتاریاں کرے ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی ضلع قصو ر کے راہنماء حاجی محمد رمضان نے چائلڈ لیبر کے حوالے سے حکومتی اقدامات پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا انہوں نے صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ا س وقت نا صرف ضلع قصور بلکہ پورے پنجاب میں بھٹہ خشت پر کام کرنے والے چھوٹے چھوٹے بچوں کو روکنے کے لئے بھٹہ مالکان کے خلاف کاروائی کر رہی ہے ہر جگہ حکومت مخالف بھٹہ مالکان کو پکڑ پکڑ کرجیلوں میں بند کیا جا رہا ہے جبکہ دوسری طرف حکمران پارٹی کے با اثر بھٹہ مالکان کو انتظامیہ نے کھلی چھٹی دے رکھی ہے ۔چائلڈ لیبر رکھنے والے مل مالکان ، ہوٹل مالکان ، دُکاندار اور گھروں میں کام کرنے والے بچوں کے خلاف کاروائی نہ کر کے حکومت اپنے چہیتے صنعت کاروں کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کر رہی انہوں نے کہا کہ بھٹوں پر کام کرنے والے چھوٹے چھوٹے بچوں کے ماں باپ انتہائی غریب ہوتے ہیں اور غربت کے مارے اپنے بچوں کو محنت مزدوری پر لگاتے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت منشیات فروشوں ،چوروں ڈاکوؤں اور دہشت گردوں کو پکڑنے کی بجائے چائلڈ لیبر کے پیچھے پڑ گئی ہے حالانکہ اس وقت سب سے بڑا مسلہ ملک میں دہشت گردی کا ہے جس کی تازہ مثال صوبہ کے پی کے میں چار سدہ یونیورسٹی کی ہے انہوں نے کہاکہ تعلیم حاصل کرنے والے چھوٹے بچوں کو بے دردی سے قتل کرنے والے دہشت گردوں کو پکڑا جائے اور جب تک غریب آ دمیوں کو روٹی کپڑا او ر مکان مہیا نہیں کیا جاتا چائلڈ لیبر کے خلاف نرم رویہ اختیار کیا جائے ۔

یہ بھی پڑھیں  خواجہ آصف کا 10 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker