شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / کمسن بچوں اوربچیوں پرجنسی تشدد کے رجحان میں گزشتہ سال 15فیصد اضافہ دیکھا گیا

کمسن بچوں اوربچیوں پرجنسی تشدد کے رجحان میں گزشتہ سال 15فیصد اضافہ دیکھا گیا

childقصور( حافظ جاویدالرحمن سے ) کمسن بچوں اور بچیوں پرجنسی تشدد کے رجحان میں گزشتہ سال 15فیصد اضافہ دیکھا گیا 1573رپورٹ شدہ واقعات میں 72فیصد لڑکیوں اور28فیصد لڑکوں کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا ایک سے15سال کی بچیاں زیادہ شکار ہوئین جبکہ6سے15سال کے بچے زیادہ تر جنسی تشدد کا شکار ہوئے گزشتہ سال ساحل نے6788کیسوں میں متاثرین کو فری قانانی امداد مہیا کی پورے ملک میں جنسی تشدد سے متاثرہ بچے اور بچیوں کو فری لیگل ایڈ فراہم کرنے کے علاوہ جنسی تشدد کے رجحان سے محفوظ رکھنے کیلئے سیمینار اور لیکچرز کا اہتمام کیا گیا یہ بات ریجنل کو آرڈینیٹر لاہور ساحل عنصر سجاد بھٹی نے مقامی ہوٹل میں منعقدہ پریس بریفنگ کے دوران بتائی اس موقع پر آفیسر لیگن ایڈ ساحل عاطف ،عدنان خاں ،ڈپٹی ڈسٹرکٹ آفیسر ایجوکیشن مردانہ قصور میاں ظہور الحق ،محمد رفیق سندھو ،سینئر ہیڈ ماسٹر گورنمنٹ ہائی سکول کل موکل ،اور دیگر بھی موجود تھے عنصر سجاد بھٹی نے کہا کہ ساحل گزشتہ 16سال سے ملک میں بچوں اور بچیوں پر ہونے والے جنسی تشدد کے خلاف آواز اٹھا رہی ہے اس ضمن میں انہوں نے یونین کونسلوں کی سطح پر متاثرہ خاندانوں کو مفت قانونی امداد مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ معاشرے سے اس برائی کو مٹانے کی خاطر مختلف پروگرام تشکیل دیئے انہوں نے بتایا کہ سکولوں کے اساتذہ ،دینی ،مدرسوں کے مدرسین،پولیس حکام اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کے ساتھ میٹنگز اور لیکچرز کا اہتمام کرکے اس مہم کو کامیابی سے چلایا جا رہا ہے انہوں نے سماجی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ ساحل کے دست و بازو بن کر اس معاشرتی برائی کو جڑ سے ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں

یہ بھی پڑھیں  گوجرانوالہ:ڈی سی او کی زیر صدارت فلائی اوور کی تعمیر کے سلسلہ میں جائزہ اجلاس