تازہ ترینعلاقائی

چینیوٹ:مفاہمتی پالیسیوں کا وقت گزر چکاہے اب صرف آزادی مارچ ہوگا، تحریک انصاف پنجاب کے صدرچوہدری اعجاز

چنیوٹ (بیورورپورٹ )تحریک انصاف پنجاب کے صدر چوہدری اعجاز نے ڈسٹرکٹ پریس کلب چنیوٹ میں ایک پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مفاہمتی پالیسیوں کا وقت گزر چکاہے اب صرف آزادی مارچ ہوگا اور اس میں تمام اپوزیشن جماعتوں کی بھرپور شرکت ہوگی انہوں نے کہاکہ اب چار حلقوں کی نہیں بلکہ پورے ملک میں نئے انتخابات کرائے جائیں گے تاکہ 11 مئی 2013 ؁ میں ہونے والی دھاندلی کھل کرسامنے آسکے اور ہماری سیاسی جدوجہد اس وقت کامیا ب ہوگی ، جب جعلی حکمران عوامی عدالت میں لائے جائیں گے انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے پنجاب کو اپنی ذاتی ملکیت سمجھتے ہوئے گزشتہ تین روز سے مختلف شہروں کو بند کرنے کا ڈرامہ شروع کررکھا ہے اور بلا وجہ دفعہ 144 کا نفاذ کیا جا چکاہے جن میں بھکر ، خوشاب ، فیصل آباد ، لاہور اور اسلام آباد شامل ہیں ، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ PTI کا موقف واضح ہے کہ آزادی مارچ ہر صورت ہوگا اور ہم پرامن آزادی مارچ کی پالیسی لیکر گھر وں سے نکلے ہیں اور اگر ہمارے کارکنوں کو گرفتار کیا گیا اور ہمارا راستہ روکا گیا تو حکمران جماعت کی بوکھلاہٹ کھل کر سامنے آجائے گی ، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم عوامی تحریک کے کارکنوں پر کئے گئے کریک ڈاؤن کی پرزور مذمت کرتے ہیں ہمارے اور ان کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں اور ان کا مقصد ایک ہے ، ایک سوال کے جواب میں اعجاز چوہدری نے کہا کہ جب پورے ملک کی اسمبلیاں دھاندلی کی پیداوار ہیں تو خیبر پختونخواہ کی اسمبلی بھی اس کا حصہ ہے اس مو قع پر PTIکے ضلعی صدر میاں شوکت علی تھہیم ایڈووکیٹ ، چوہدری فیض اللہ کموکا ، سابق ایم این اے سید عنائیت علی شاہ ، سید افضل شاہ اور کارکنان کی بڑی تعداد بھی موجو د تھی ، اعجا ز چوہدری نے مزید کہا کہ ہم عوامی تحریک کے کارکنوں کے ساتھ ہیں وہ بھی ایک جدوجہد کررہے ہیں اورہم بھی، ہم نوا زشریف کو پیغام دیتے ہیں کہ مارشلاء سے خو د بھی بچے اور عوام کو بھی بچائے ہم نے سواسال کوشش کی ہے کہ مذاکرات کے ذریعے مسئلہ حل ہوجائے مگر یہ لوگ بہت ڈھیٹ ہیں ، پورے ملک اور پنجاب کو ایک قید خانہ بنا دیا گیاہے ، یہ ان کی بوکھلاہٹ کا واضع ثبوت ہے اب کوئی مذاکرات نہیں ہونگے جو کچھ ہوگا اسلام آباد میں ہی ہوگا ۔ 

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button