تازہ ترینعلاقائی

چند ماہ کا منصوبہ سالوں بعد ہی پایہ تکمیل تک نہ پہنچ

چنیوٹ (بیورو رپورٹ)چند ماہ کا منصوبہ سالوں بعد ہی پایہ تکمیل تک نہ پہنچ سکا 24کروڑ روپے کی لاگت سے سیوریج پائپ لائن کا منصوبہ کھٹارے میں پڑ گیا کمیشن مافیاء لمبے نوٹ وصول کر کے غائب ہو گیا سڑکیں تباہ گلیوں بازاروں کا حلیہ عوام کو منہ چڑھانے لگاجگہ جگہ گندگی کے ڈھیر بد بو اور تعفن کا راج موذی مراض نے جنم لے لیا ارباب اختیار اہم مسئلہ کا حل کرنے سے مکمل طور پر دستبردار ہو گئے متعلقہ افسران اور عوامی نمائندگان نے لاکھوں عوام کو زندہ درگور کرنے کا این او سی جاری کردیاتفصیلات کے مطابق ضلع چنیوٹ کے درجنوں علاقوں محلہ غفورآباد،حاجی آباد،کرم آباد،قاسم ٹاؤن،مقیت ٹاؤن،رائے چند،بستی اوڈھاں،محلہ سوداگراں،دادپورہ،نئی آبادی سمیت درجنوں علاقوں کے مکین سراپا احتجاج بن گئے ہیں اور ان علاقوں کی عوام کے لئے واحدمین شاہراہ اورگزر گاہ کو سیوریج پائپ لائن بنانے کے لئے اکھاڑ کر مقامی ایم پی ائے کا چہیتا ٹھیکیدارو عملہ سمیت غائب ہو گئے ۔ جس کی وجہ سے جگہ جگہ پڑے گندگی کے ڈھیر ٹی ایم ائے افسران کو منہ چڑھا رہے ہیں ہزاروں عوام شدید مشکلات سے دوچار ہو گئے کوئی پرسان حال نہ رہا متعدد علاقوں کے عوام اپنے علاقوں سے میں ختم نبوت چوک تک آنے کے لئے کئی کلو میٹرز کا متبادل راستہ اختیار کرنے پر مجبور ہو گئے ۔ٹی ایم ائے و دیگر متعلقہ افسران کے کانوں پر جوں تک نہ رینگی ہے متعدد علاقوں کے مکینوں نے گزشتہ روز ہونے والے سروے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مقامی ایم پی ائے گروپ کے چہیتے ٹھیکیدار کو ان علاقوں میں نئے سیوریج سسٹم بچھانے کے لئے چوبیس کروڑ روپے کی گرانٹ منظور کرواتے ہوئے ٹھیکہ دیا گیا ٹھیکہ منظور ہوتے اور رقم ہاتھ لگتے ہی کمیشن مافیاء اپنی دہاڑیاں لگا اونے پونے جبکہ ٹھیکیدار مین شاہرات اور تمام علاقوں کی گلیوں بازاروں چوکوں چوراہوں کی سڑکوں کو اکھاڑ کر لمبی رقم سمیت غائب ہوگئے ہیں جس کی وجہ سے ہزاروں عوام شدید مشکلات سے دوچار ہو کر رہ گئے ہیں جبکہ گزشتہ روز ہونے والی بارش نے مکینوں کو گھروں میں محصور کرکے رکھ دیا ہے ۔مکینوں کا کہنا ہے کہ عوامی نمائندگان عوام کے حقوق کے نام پر ڈاکو بن گئے ہیں اور موت کوبھول کرعوام کے نام پر اپنے پیٹ جہنم کی آگ سے بھرنے میں لگے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے عوام ذلیل و خوار ہو رہے ہیں مکینوں کا کہنا تھا کہ آئندہ انتخابات میں اگر موجودہ مقامی ایم این ائے اور ایم پی ائے نے ان علاقوں کا رخ کیا تو ان کا جوتیوں سے تاریخی استقبال کیا جائے گا جسے میڈیا بھی دکھائے تو پوری دنیا کو انکے کرتوت واضح ہو سکیں اہلیان علاقہ نے نئے آنے والے ڈی سی او چنیوٹ شوکت علی خان کھچی سے مطالبہ کیا ہے کہ درجنوں علاقوں میں ڈالا جانے والا سیوریج سسٹم جوکہ تعطل کا شکار ہے کی جلد از جلد تعمیر کو ممکن بنوایا جائے تاکہ ہزاروں بلکہ لاکھوں عوام سکھ کا سانس لے سکیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!