علاقائی

چنیوٹ:سکول ٹیچر عبدالقدوس کی چناب نگر پولیس کے وحشیانہ تشدد سے ہلاکت کے خلاف احتجاجی اجلاس

چنیوٹ/چناب نگر﴿بیورورپورٹ﴾ گورنمنٹ سکول ٹیچر عبدالقدوس کی چناب نگر پولیس کے وحشیانہ تشدد سے ہلاکت کے خلاف ملک غلام عباس نسوانہ وائس چیرمین پنجاب بار کونسل کی زیر صدارت احتجاجی اجلاس چناب نگر بار میں منعقد ہوا ۔ تفصیلات کے مطابق اجلاس میں سید صابر حسین بخاری ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن چنیوٹ ، جنرل سیکٹری بار ایسوسی ایشن ملک فضل حسین کالرو، سینئر ایڈووکیٹ اور سابق اٹارنی چناب نگر حاجی محمد حسین مارتھ ، گروپ چیرمین سید مظہر حسین ، سینئر ایڈووکیٹ چنیوٹ عابد امام زیدی، الطاف حسین لاشاری، ایڈوکیٹ ہائی کورٹ لاہور، گروپ چیرمین غلام سرور سیف چناب نگربار, عامر منیر ملک صدر چناب نگر بار ایسوسی ایشن، جنرل سیکرٹری چناب نگر بار طارق بسرائ کے علائوہ دیگر وکلائ صاحبان نے شرکت کی اور چناب نگر پولیس کے ہاتھوں وحشیانہ تشدد کی سخت مزمت کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے قانون کے مطابق سخت سزا دی جائے۔وائس چیرمین پنجاب بار کونسل ملک غلام عباس نسوانہ نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ چناب نگر کے ایس آئی شجاعت ملہی ، مناظر لک اور دیگر ملزمان کے خلاف سیشن جج سے جو ڈیشل انکوائری کروائی جائے اور پولیس تشدد کے مرتکب ذمہ داران کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ سیکرٹری چنیوٹ بار ایسوسی ایشن ملک فصل حسین کالرو نے کہا کہ ڈی پی او چنیوٹ کو علم ہے کہ یہ دونوں اے ای آئی پیسوں کی خاطر لوگوں کو غیر قانونی حراست میں لے کر اپنے نجی ٹارچر سیلوں میں لے جا کر تشدد کا نشانہ بناتے ہیں اس کے باوجود ڈی پی او نے ڈیرھ ماہ سے غیر قانونی حراست میں لئے جانے والے سکول ٹیچر عبدلقدوس کا نوٹس کیو ںنہ لیا۔ جنرل سیکرٹری چناب نگر بار طارق بسرا ئ نے وکلائ صاحبان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بے گناہ ٹیچر عبدلقدوس کے قتل میں دی پی او چنیوٹ ، ڈی ای ایس پی سرکل چناب نگر اور ایس ایچ او تھانہ چناب نگر برابر کے شریک ہیں ان تمام لوگوں کے خلاف مقدمہ درج ہونا چاہئے۔کیونکہ ادارے کے سربراہ کے علم کے بغیر کبھی بھی ماتحت آفیسر کسی بھی شخص کو غیر قانونی حراست میں تھااور ڈی پی او اور ڈی ایس پی سرکل کو علم تک نہ ہو سکا ۔ سینئر ایڈوکیٹ عابد امام زیدی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ٹیچر عبدلقدوس کے قتل میں اہلیان چناب کے ذمہ داران عہدیداروں کی بھی غفلت شامل ہے۔جب عبدلقدوس اتنے دن پولیس کی غیر قانونی حراست میں رہا اور تھانہ سے غائب کر دیا گیا اس وقت انہوں نے اعلیٰ حکام کو کیوں آگاہ نہ کیا۔اب آنسو بہانے کا کیا فائدہ۔ یہ اہلیان چناب نگر کے لئے لمحہ فکریہ ہے کہ ایک انسان ان لوگوں کی غفلت سے زندگی کی بازی ہار گیا۔ آخر میںوائس چیرمین پنجاب بار کونسل اور دیگر معزز وکلائ صاحبان نے چناب نگر بار کو ٹیچر عبدلقدوس کے لواحقین کو یقین دہانی کروائی کہ ہم ہر حال میں آپ کے ساتھ ہیں اور جب تک ملزمان گرفتار کرکے قانونی کاروائی نہیں کی جاتی ہم جدوجہد جاری رکھیں گے۔ اور وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان کو فوری چور پر گرفتار کرکے سخت سزا دی جائے۔ اور ڈی پی او چنیوٹ اور ڈی ایس پی سرکل چناب نگر کے خلاف بھی کاروائی عمل میں لائی جائے اور عبرت کا نشان بنایا جائے تا کہ کوئی شریف شہری آئندہ پولیس کے وحشیانہ تشدد سے ہلاک نہ ہو۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ : نوجوان صحافی حافظ حسنین رضا کو جرات مندانہ صحافت کا ایوارڈ ملنے پر صحافتی تنظیموں کا خراج تحسین

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker