پاکستانتازہ ترین

سی این جی کی عدم فراہمی، سلنڈر اتارنے کیخلاف ٹرانسپورٹروں کی ہڑتال چوتھے دن میں داخل

cng hartalاسلام آباد(بیورو رپورٹ)سی این جی کی عدم فراہمی ، ایک سے زائد سلنڈر والی گاڑیوں کیخلاف کارروائی ، گاڑیوں کی تھانوں میں بندش اور بغیر کسی تنبیہ کے پولیس اور ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی طرف سے سلنڈر اتارے جانے کیخلاف پبلک ٹرانسپورٹ تنظیموں نے احتجاج کا دائرہ کار پنجاب بھر تک وسیع کرنے کا اعلان کردیا ۔جبکہ راولپنڈی اسلام آباد متحدہ ٹرانسپورٹ یونین اتھارٹی نے اوگرا کی جانب سے مبینہ طور پر ناروا اور امتیازی سلوک اپنائے جانے کیخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ جانے کا فیصلہ کرلیا ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ تین روز سے جاری پبلک ٹرانسپورٹ ہڑتال کاسلسلہ آج بھی جاری رہے گا اور دوسری جانب ٹرانسپورٹ تنظیمو ں نے احتجاج کا دائرہ کار پنجاب بھر تک وسیع کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ گزشتہ تین روز سے راولپنڈی اسلام آباد کے تقریباً اٹھائیس روٹس پر چلنے والی پبلک ٹرانسپورٹ نے ہڑتال کررکھی ہے ۔ اس حوالے سے ٹوئن سٹی ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے عہدیداران سلطان اعوان ، راجہ شبیر کیانی و دیگر نے آن لائن سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 2012ء میں اوگرا نے ایک لیٹر جاری کیا تھا جس کے مطابق سی این جی پر چلنے والی مسافر گاڑیاں (پبلک ٹرانسپورٹ )دو سلنڈر رکھ سکتی ہیں تاہم پانچ جون 2013ء کو جاری کردہ لیٹر کے مطابق تمام سیکرٹریز ٹرانسپورٹ اتھارٹیز ، ٹریفک پولیس ، موٹر وے و نیشنل ہائی ویز پولیس کو احکامات جاری کئے گئے ہیں کہ مسافر گاڑیوں میں ایک سے زائد سلنڈر والی گاڑیو ں کیخلاف ایکشن لیا جائے اور انہیں سی این جی فراہم نہ کیاجائے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہماری گاڑیوں کو نہ صرف سی این جی فراہم کرنے سے انکار کیا گیا بلکہ مختلف سی این جی سٹیشنوں ، متخلف روٹس ،ٹریفک پولیس و دیگر کی طرف سے ہماری گاڑیاں بند کی گئیں موٹر وے پر پبلک ٹرانسپورٹ گاڑیوں کے سلنڈر اتار لیا لئے گئے اور درجنوں گاڑیو ں کو تھانوں مں بند کیاگیا جس کیخلاف ٹوئن ٹرانسپورٹ فیڈریشن نے ہڑتال شروع کی ۔ ایک سوال کے جواب میں ان کہا کہنا تھا کہ اسلام آباد کورٹ کے فاصلے پ بالخصوص سکول وینز اور بالمعموم پبلک ٹرانسپورٹ کا ذکر ہے مگر اس کے باوجود صرف پبلک ٹرانسپورٹ کو نشانہ بنایاگیا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ اوگرا کی جانب سے صرف پنجاب میں چلنے والی پبلک ٹرانسپورٹ مہم شروع کرنا بھی امتیازی سلوک ہے اس لئے پنجاب بھر کی ٹرانسپورٹ فیڈریشنز نے کل (پیر) سے مکمل ہڑتال کا فیصلہ کیا ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ یہ ہڑتال ا غیر اعلانیہ ہے اور یہ ہڑتال اس وقت تک جاری رہے گی جب تک ہمارے مطالبات پورے نہیں کرلئے جاتے ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پبلک ٹرانسپورٹ کے حوالے سے اوگرا اور حکومت کی طرف سے حفاظتی انتظامات اٹھانے کیلئے تیار ہیں مگر اس کے باوجود ہمارے نہیں سنی جارہی جس کیخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ می ں کل پیر ()کو درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button