تازہ ترینعلاقائی

جہلم:غیرت کے نام پر مبینہ طور پربرٹش نیشنلٹی ہولڈر پاکستانی نژاد لڑکی قتل

جہلم(نامہ نگار) غیرت کے نام پر مبینہ طور پربرٹش نیشنلٹی ہولڈر پاکستانی نژاد لڑکی قتل ،ماں باپ سابق شوہر سمیت پانچ افراد کے خلاف قتل کا مقدمہ درج ، ابتدائی پوسٹمارٹم رپورٹ میں لڑکی کے جسم پر تشدد کا کوئی نشان نہیں تھا مزید تفتیش کے لیے جسم کے نمونے فرانزک لیب میں ٹیسٹ کے لیے بھیج دیئے گئے ہیں تفصیلات کے مطابق جہلم کے نواحی علاقہ تھانہ منگلا کی حدود میں واقع گاؤں پنڈوری کی رہائشی برٹش نیشنلٹی ہولڈر سامیہ شاہد نے شکیل سے طلاق کے بعد دوسال قبل انگلینڈ میں مختار کاظم سے پسند کی دوسری شادی کی تھی جس کے بعد دونوں میاں بیوی دوبئی میں شفٹ ہوگئے تھے سامیہ شاہد کے خاوند مختار کاظم کے مطابق شادی کے بعد سامیہ کو اس کے والدین اور کزن قتل وسنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے تھے چند ہفتے قبل اس کی والدہ امتیاز بی بی نے فون پر بتایا کہ تمارے والد شدید بیمار ہیں تم جلد پاکستان پہنچو ں 11جولائی کو سامیہ پاکستان آئی جس کا مجھ سے مسلسل رابطہ تھا 20جولائی کو میرا فون اس نے نہیں سنا 21جولائی کو میں نے سامیہ کے کزن مبین کو فون کیا تو اس نے بتایا کہ تمہاری بیوی ہاٹ اٹیک سے فوت ہو گئی ہے لیکن مجھے پورا یقین ہے کہ سامیہ کو پسند کی شادی کرنے پر اس کے والد شاہد ،والدہ امتیاز بی بی ،سابق شوہر شکیل ،دوست مدعیہ شاہ ،اور کزن مبین نے غیرت کے نام پر قتل کیا ہے پولیس کے مطابق ابتدائی پوسٹمارٹم رپورٹ میں مرحومہ کے جسم پر تشدد کا کوئی نشان ثابت نہیں ہوا ہے سیمپل لاہور لیبارٹری بھیج دیئے ہیں جس کی رپورٹ آنے پر اصل حقائق سامنے آئے گئے پولیس نے خاوند کی درخواست پر قتل کی دفعات درج کر کہ تفتیش شروع کر دی ہے

یہ بھی پڑھیں  جہلم :خونی چوک میں ایک اور ٹریفک حادثہ جماعت الدعوۃ کی بس ٹرالر سے ٹکڑا گئی دس مسافر زخمی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker